معیشت پرکورونا کے اثرات کے باوجود بجٹ میں عام آدمی کو ریلیف دینگے: حفیظ شیخ

  معیشت پرکورونا کے اثرات کے باوجود بجٹ میں عام آدمی کو ریلیف دینگے: حفیظ شیخ

  

اسلام آباد (آن لائن) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی زیر صدارت تحریک انصاف اور اس کی اتحادی جماعتوں کے پارلیمانی رہنماؤں کا اجلاس پیر کو پارلیمنٹ ہاؤس میں ہوا جس میں مشیر تجارت رزاق داؤد، مشیر خزانہ حفیظ شیخ اور حکومت و دیگر اتحادی جماعتوں کے اہم رہنماؤں نے شرکت کی۔ مشیر خزانہ نے کورونا عالمی وبائی چیلنج سے متعلق ملکی معیشت پر پڑھنے والے منفی اثرات اور معاشی صورتحال کا مجموعی جائزہ پیش کیا۔ ان کی جانب سے بتایا گیا کہ آئندہ مالی سال کابجٹ بھی کرونا کی صورتحال کو مدنظر رکھتے ہوئے بنایا جارہاہے جس میں عام آدمی کو ریلیف دینے کیلئے تمام تر اقدامات اٹھائے جائینگے۔ مہنگائی کی شرح میں کمی کیلئے بھی ہدایات جاری کردی گئی ہیں جبکہ اس وقت ملک کو درپیش معاشی چیلنجز کا مقابلہ کرنے کیلئے ضروری ہے کہ ہم اپنے غیر ضروری اخراجات ختم کریں ۔ نئے بجٹ میں غیر ترقیاتی اخراجات نہ ہونے کے برابر ہونگے اور ہم ان شعبوں کی طرف زیادہ توجہ دینگے جن کی وجہ سے معیشت بہتر ہوگی۔ اس موقع پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف اور اس کی اتحادی جماعتوں کے اراکین بجٹ اجلاس کے موقع پر ایوان میں اپنی حاضری کو یقینی بنائیں تاہم کورونا وائرس کی وجہ سے تمام تر حفاظتی انتظامات کو بھی مدنظر رکھا جائے یہ بڑا چیلنج ہے جس کا ہم نے مل کر مقابلہ کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت عوام کے مسائل کی حل کی طرف خصوصی توجہ دے رہی ہے اس موقع پر پارلیمانی رہنماؤں نے زور دیا کہ مہنگائی میں کمی لائی جائے اور پٹرول کی قلت کا نوٹس لیتے ہوئے حکومت ملک بھر میں پٹرول کی دستیابی یقینی بنائے کیونکہ عوام کو شدیدمشکلات کا سامنا ہے ذرائع کے مطابق اس موقع پر پارلیمانی رہنماؤں نے شوگر سکینڈل میں ملوث افراد کیخلاف کارروائی کے حکومتی اقدام کو سراہا دریں اثنا مشیر برائے خزانہ ڈاکٹر عبد الحفیظ شیخ نے زرعی شعبے کے لیے اعلان کردہ 50 ارب روپے کی جلد تقسیم کا اعلان کر دیا۔ان خیالات کا اظہار مشیر خزانہ حفیظ شیخ نے فارمرز ایسوسی ایشن کے نمائندہ وفد سے ملاقات کے دوران کیا، ملاقات کے دوران وزیر خارجہ، اقتصادی امور، مشیر تجارت اور دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی فارمرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین کے طور پر ملے۔مشیر خزانہ ڈاکٹر عبد الحفیظ شیخ کا کہنا ہے کہ کاشتکاروں اور کسانوں کی بھرپور مدد کی جائے گی، کاشتکاروں کی بجٹ سے متعلق قابل عمل تجاویز کو بجٹ میں شامل کریں گے۔مشیر خزانہ کا مزید کہنا تھا کہ کاشتکاروں کو براہ راست ریلیف کی فراہمی حکومت کی ترجیح ہے، بجلی کے ٹیرف، کھاد پر ڈیوٹی اور زرعی قرضوں پر مارک اپ کم کریں گے، پچاس ارب کے زرعی پیکیج کی موزوں تقسیم کیلئے تجاویز کو خوش آمدید کہیں گے۔

حفیظ شیخ

مزید :

صفحہ اول -