خورشید شاہ کے خلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس کی سماعت پیر کو بھی نہ ہوسکی

  خورشید شاہ کے خلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس کی سماعت پیر کو بھی نہ ہوسکی

  

سکھر (این این آئی)پاکستان پیپلزپارٹی کے اہم رہنما خورشید شاہ کے خلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس کی سماعت پیر کو بھی نہ ہوسکی، عدالت کی جانب سے سماعت 22جون تک ملتوی کردی گئی۔تفصیلات کے مطابق سکھر کے احتساب عدالت کے جج نہ ہونے کی وجہ سے خورشیدشاہ کے کیس کی سماعت ایک بار پھر نہیں ہوسکی، احتساب عدالت میں نئے جج کی تعیناتی عمل میں لانی ہے جس پر ایک ماہ سے عمل درآمد نہیں ہوا ہے۔ عدالت کی جانب سے سماعت 22جون تک ملتوی کردی گئی ہے۔نیا جج تعینات نہ ہونے کی وجہ سے خورشید کے آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس سمیت دیگر اہم کیسز التوا کا شکار ہیں۔ پی پی رہنما سلیم جان مزاری اور رف کھوسو کیس کی سماعت بھی 21جولائی تک ملتوی کردی گئی۔اس سے قبل خورشید شاہ کیس کی سماعت 18 مئی کو ہونا تھی تاہم وہ بھی جج نہ ہونے کی وجہ سے ملتوی کی گئی تھی۔ نیب کی جانب سے پی پی رہنما کے خلاف ایک ارب 23 کروڑ کا ریفرنس دائر ہے۔واضح رہے 18 ستمبر کو نیب سکھر اور راولپنڈی نے مشترکہ کارروائی کرتے ہوئے آمدن سے زاید اثاثہ جات کیس میں خورشید شاہ کو گرفتار کیا تھا، بعد ازاں احتساب عدالت نے خورشید شاہ 21 ستمبر تک راہداری ریمانڈ پر نیب کے حوالے کردیا تھا۔

خورشید شاہ

مزید :

صفحہ آخر -