کوروناوائرس کے پھیلنے اور مشتبہ مریضوں کی تعداد میں اضافہ کے بعد سرکاری ہسپتالوں میں کورونا ٹیسٹ کٹس ختم، نئی پریشانی کھڑی ہوگئی

کوروناوائرس کے پھیلنے اور مشتبہ مریضوں کی تعداد میں اضافہ کے بعد سرکاری ...
کوروناوائرس کے پھیلنے اور مشتبہ مریضوں کی تعداد میں اضافہ کے بعد سرکاری ہسپتالوں میں کورونا ٹیسٹ کٹس ختم، نئی پریشانی کھڑی ہوگئی

  

لاہور (ویب ڈیسک )مشتبہ مریض سرکاری ہسپتالوں میں ٹیسٹ نہ ہونے پر نجی لیب پر جانے پر مجبور، بجٹ فراہم کر دیا گیا۔

روزنامہ دنیا کے مطابق جنرل ہسپتال و جناح ہسپتال میں کوروناوائرس کے ٹیسٹ کیلئے بی ایس ایل تھری بنائی گئی تھی لیکن ٹیسٹ کٹس ختم ہونے کی وجہ سے مشتبہ مریضوں کے ٹیسٹ نہیں کیے جا رہے جس کی وجہ سے مریضوں کو علاج معالجہ میں شدید دشواری کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جبکہ کورونا کے فوکل ہسپتال میو اور سروسز ہسپتال میں کورونا ٹیسٹ کٹس ختم اور محدود ٹیسٹوں کے نمونے محکمہ صحت کی لیبارٹری میں بھجوائے جا رہے ہیں، سرکاری ہسپتالوں میں ٹیسٹ کٹس کی عدم دستیابی پر غریب مریضوں کو نجی لیبارٹریوں سے مہنگے داموں ٹیسٹ کروانے پڑ رہے ہیں جس سے ان کی مشکلات میں مزید اضافہ ہو رہا ہے۔

سیکرٹری صحت سپیشلا ئزڈ ہیلتھ کئیر نبیل اعوان کا کہنا ہے کہ ہسپتالوں میں ٹیسٹ کٹس کی سہولیات کو ممکن بنایا جا رہا ہے ہسپتالوں کو ٹیسٹ کٹس خریدنے کیلئے بجٹ فراہم کر دیا گیا ہے۔مشتبہ مریضوں کی تعداد بڑھنے اور ٹیسٹ کی صلاحیت بڑھنے سے مصنوعی قلت ہوئی ہے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -کورونا وائرس -