کھلاڑیوں کو بھی اپنی نوکریوں کی فکر لاحق، بورڈ سے مایوس کرکٹرز کا عمران خان سے ملاقات کا فیصلہ

کھلاڑیوں کو بھی اپنی نوکریوں کی فکر لاحق، بورڈ سے مایوس کرکٹرز کا عمران خان ...
کھلاڑیوں کو بھی اپنی نوکریوں کی فکر لاحق، بورڈ سے مایوس کرکٹرز کا عمران خان سے ملاقات کا فیصلہ

  

لاہور (ویب ڈیسک) پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیلنجز اور مشکلات ہر گزرتے وقت کے ساتھ بڑ ھتی جارہی ہیں، گزشتہ سال اگست میں سامنے آنے والا پی سی بی کا نیا آئین مکمل طور پر نافذ نہیں ہو سکا، پھر پاکستان سپر لیگ کے دوران لائیو اسٹریمنگ مقابلے جوئے کی ویب سائٹ Bet365 پر دکھائے جانے کے معاملے پر بورڈ کی وضاحت پر تحفظات پائے جاتے ہیں۔

روزنامہ جنگ کے مطابق ڈپارٹمنٹ کرکٹ بند ہونے کے بعد کھلاڑیوں کو اپنی نوکری بچانے کی فکر لاحق ہے، ڈپارٹمنٹ کا موقف ہے کہ جب ان کی ٹیم کو فرسٹ کلاس کرکٹ کھیلنے کی اجازت نہیں، تو ماہانہ لاکھوں روپے تنخواہ اور مراعات کھلاڑیوں کو دینے کا فائدہ کیا۔

دوسری طرف کھلاڑیوں کا موقف ہے کہ گزشتہ سال نیا فرسٹ کلاس نظام متعارف کروانے والا بورڈ تاحال ڈپارٹمنٹ کرکٹ کے بارے میں کوئی واضح موقف پیش نہیں کرسکا۔اطلاعات تھیں کہ بورڈ نئے سیزن میں مختصر دورانیے پر محیط ایک نان فرسٹ ٹورنامنٹ ڈپارٹمنٹ کی سطح پر منعقد کروائے گا، البتہ اس معاملے میں کوئی پیش رفت نہیں۔

اس تناظر میں کھلاڑیوں کا موقف ہے کہ بورڈ کا نئے فرسٹ کلاس نظام میں 50 ہزار روپے کا معاہدہ ان کے گھر اور بچوں کی پڑھائی کے اخراجات پورے نہیں کرسکتا۔ڈپارٹمنٹ انہیں میڈیکل کی سہولت دیتا ہے، مستقل نوکری ہے، بورڈ ان دونوں باتوں میں پیچھے ہے، اس ساری صورت حال میں کھلاڑی پہلے مرحلے میں وفاقی وزراءکیساتھ ملاقاتیں کریں گے اور پھر براہ راست وزیر اعظم سے ملاقات کے لیے وقت لیں گے۔

کھلاڑیوں نے نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر بتایا کہ وزیر اعظم عمران خان کرکٹ کے کھلاڑی تھے اور آج جب وہ وزیر اعظم ہیں تو ادارے کرکٹ کی ٹیمیں بند کر رہے ہیں، کھلاڑی بے روزگار ہو رہے ہیں، اس سے تو ملک میں کرکٹ کا کھیل ہی ختم ہو جائے گا کیونکہ جب کرکٹ میں آج کی نسبت مستقبل کا تحفظ نہیں ہوگا، تو کوئی کیوں کر اس کھیل کی طرف آئے گا۔

مزید :

کھیل -