کورونا دسمبر 2019ءمیں نہیں بلکہ اس سے بہت پہلے ووہان میں پھیل چکا تھا کیونکہ ۔ ۔ ۔برطانوی میڈیا نے نیا دعویٰ کردیا

کورونا دسمبر 2019ءمیں نہیں بلکہ اس سے بہت پہلے ووہان میں پھیل چکا تھا کیونکہ ۔ ...
کورونا دسمبر 2019ءمیں نہیں بلکہ اس سے بہت پہلے ووہان میں پھیل چکا تھا کیونکہ ۔ ۔ ۔برطانوی میڈیا نے نیا دعویٰ کردیا

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) سبھی جانتے ہیں کہ کورونا وائرس چین کے شہر ووہان میں دسمبر 2019ءمیں پھیلا لیکن اب اس حوالے سے ایک اور تہلکہ خیز دعویٰ سامنے آ گیا ہے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق ووہان میں ہسپتالوں کے باہر ٹریفک اور انٹرنیٹ پر کورونا وائرس کے متعلق سرچز کو دیکھتے ہوئے دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ کورونا وائرس دسمبر میں نہیں بلکہ اس سے کئی ماہ قبل 2019ءکے موسم گرما میں ہی ووہان میں پھیل چکا تھا۔

رپورٹ کے مطابق آر ایس میٹرکس سمیت ٹریفک کے بہاﺅ کی نگرانی کرنے والی کئی آن لائن سروسز کے گزشتہ گرمیوں کے سکرین شاٹس انٹرنیٹ پر پوسٹ کیے جا رہے ہیں، جن میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ووہان میں گزشتہ سال موسم گرما کے آخر میں ہسپتالوں کے باہر ٹریفک معمول سے کئی گنا زیادہ رہی۔ اس کے ساتھ انہی دنوں میں ووہان کے لوگوں نے انٹرنیٹ پر کورونا وائرس کے متعلق بہت سرچز کی۔ سب سے زیادہ کورونا وائرس کی علامات کے بارے میں سرچ کیا گیا۔ چنانچہ ٹریفک اور انٹرنیٹ سرچز کی بنیاد پر کہا جا رہا ہے کہ ممکنہ طور پر اکتوبر یا اس سے بھی پہلے ووہان میں کورونا وائرس پھیل چکا تھا۔

برطانوی ماہر ڈاکٹر براﺅن سٹین کا کہنا ہے کہ ”ووہان میں گزشتہ سال اکتوبر میں کچھ تو ہو رہا تھا۔ اس بات کے واضح شواہد موجود ہیں کہ گزشتہ سال اکتوبر میں ووہان میں ایک طرح کی سماجی ابتری موجود تھی۔ وہاں کے لوگوں میں ایک ہلچل دیکھی جا رہی تھی۔ہسپتالوں کے باہر ٹریفک بہت زیادہ تھی، لوگ کورونا وائرس کے بارے میں بہت زیادہ سرچ کر رہے تھے۔شہر میں اس سماجی ہلچل کا حتمی سبب تو کوئی نہیں جانتا لیکن غالب امکان ہے کہ اس وقت شہر میں کورونا وائرس پھیل چکا تھا اور یہ اسی کی وجہ سے ہو رہا تھا۔ واضح رہے کہ چند ہفتے قبل یونیورسٹی آف کیمبرج کے سائنسدان بھی اپنی ایک تحقیق کے نتائج میں کورونا وائرس کے پھیلنے کے وقت اور جگہ کے متعلق شکوک و شبہات کا اظہار کر چکے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -کورونا وائرس -