نواز شریف کی جائیدادیں منجمد کرنے کیخلاف دائراعتراضات پرجواب داخل

نواز شریف کی جائیدادیں منجمد کرنے کیخلاف دائراعتراضات پرجواب داخل

  

 لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت میں غیرقانونی پلاٹس الاٹمنٹ کیس میں سابق وزیراعظم نواز شریف کی جائیدادیں منجمد کرنے کے خلاف دائراعتراضات پرنیب نے یوسف عباس سمیت دیگر کی درخواستوں پر جواب داخل کروا دیا احتساب عدالت کے جج اسد علی نے 22 جون کو وکلا ء کو بحث کے لئے طلب کرلیا یوسف عباس سمیت دیگر کی درخواستوں پر سماعت کی،کیس کی سماعت شروع ہوئی تو نیب کے پراسیکیوٹر حارث قریشی جبکہ درخواست گزاروں کی جانب سے زین قاضی اور قاضی مصباح ایڈووکیٹ عدالت میں پیش ہوئے غیرقانونی پلاٹس الاٹمنٹ کیس میں نواز شریف کی جائیدادیں منجمد کرنے کے خلاف یوسف عباس سمیت 7 افراد نے اعتراضات دائر کررکھے ہیں نواز شریف کی منجمد کی گئی جائیدادوں میں یوسف عباس شریف کا بھی حصہ ہے،نواز شریف کی جائیدادیں منجمد کرنے پر درخواست گزاروں یوسف عباس، اقبال مسیح، اسلم عزیز، اقبال برکت، محمد اشرف کو بھی اعتراضات ہیں، نواز شریف کی جائیدادیں منجمد کرنے پر عمیر رزاق اور رانا مشتاق کو بھی اعتراضات ہیں، عدالت نے نواز شریف کی جائیدادیں منجمد کرنے سے قبل اعتراضات نہیں سنے، عدالت سے استدعاہے کہ نواز شریف کی جائیدادیں نیلام کرنے سے روکا جائے علاوہ ازیں احتساب عدالت نے   میر شکیل الرحمن اور مقدمہ میں شریک میاں نواز شریف سمتی دیگر کے خلاف غیر قانونی پلاٹ الاٹمنٹ ریفرنس کی سماعت 16 جون تک ملتوی کردی گزشتہ روز نیب کے گواہ ریکارڈ سمیت عدالت میں پیش ہوئے،گواہ ڈی ایل ڈی ون رائے محمود حسین کا بیان ریکارڈ کیا گیاگواہ کے بیان پرپرامجد پرویز ایڈووکیٹ نے اپنی جرح مکمل کی۔

مزید :

علاقائی -