دربار پاکدامن کی توسیع کیلئے درخواست پر درخواست گزار ذاتی حیثیت میں طلب کرلیا

  دربار پاکدامن کی توسیع کیلئے درخواست پر درخواست گزار ذاتی حیثیت میں طلب ...

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ کے مسٹر جسٹس شاہد وحید نے دربار پاکدامن کی توسیع کے لئے دائر درخواست پر درخواست گزاروں کو 16 جون کو ذاتی حیثیت میں طلب کرلیا عدالت نے حکم دیاہے کہ آئندہ سماعت پرسید ضمیر علی شاہ اور سابق ایم پی اے ڈاکٹر عاصمہ ممدوٹ بھی عدالت میں پیش ہوں، عدالت عالیہ نے سادات ویلفیئر آرگنائزیشن پاکستان اور عاصمہ ممدوٹ کی درخواستوں پر سماعت کی،درخواست گزار کاموقف ہے کہ پنجاب اسمبلی نے 2010 میں دربار بی بی پاکدامن کی 72 کنال پر توسیع کی قرارداد پاس کی، محکمہ اوقاف نے گیارہ سال گزرنے کے باوجود دربار شریف کی توسیع کے لئے کام نہیں کیا، دربار بی بی پاکدامن پر روزانہ ہزاروں زائرین زیارت کیلئے آتے ہیں، جگہ کم ہونے کی وجہ سے زائرین کو کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے، عدالت سے استدعاہے کہ محکمہ اوقاف پنجاب اسمبلی کی قرارداد پر عمل درآمد اورمحکمہ اوقاف کو دربار بی بی پاکدامن کی 72 کنال پر توسیع کا حکم دیاجائے۔

دربار توسیع

مزید :

صفحہ آخر -