تعمیرات مسمار، ہاشمی فیملی کو سول کورٹس سے رجوع کرنیکا حکم

تعمیرات مسمار، ہاشمی فیملی کو سول کورٹس سے رجوع کرنیکا حکم

  

 ملتان (  خصو صی رپورٹر  )لاہور ہائیکورٹ ملتان بنچ کے جج مسٹر جسٹس طارق سلیم شیخ نے سینئر سیاستدان جاوید ہاشمی کی بیٹی میمونہ ہاشمی اور داماد زاہد بہار ہاشمی کا سکول اور شادی(بقیہ نمبر41صفحہ6پر)

 ہال سمیت دیگر عمارتیں گرانے سے متعلق درخواست پر سماعت کرتے ہوئے پیٹشر کو سول عدالت سے رجوع کرنے کا حکم دے دیا ہے عدالت عالیہ نے قرار دیا کہ اگر سول عدالت سے ریلیف نہ ملے تو پیٹشنر دوبارہ ہائیکورٹ سے رجوع کرسکتا ہے۔قبل ازیں عدالت عالیہ میں پٹیشنر میمونہ ہاشمی نے کونسلز شاہزیب ہاشمی اور تنویر عالم ہاشمی کے ذریعے درخواست دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا تھا کہ انتظامیہ نے مخدوم رشید میں ملکیتی سکول اور شادی ہال سمیت دیگر عمارتوں کو مسمار کیا، عمارتوں کو مسمار کرنے کی آئینی اور قانونی وجہ نہیں بتائی گئی، انتظامی افسران ہراساں و پریشان کررہے، جو کہ غیر قانونی اقدام ہے، بلڈنگز گرانے سے متعلق تحقیقات کے لیے جے آئی ٹی بنائی جائے۔ والد مخدوم جاوید ہاشمی سینئر سیاستدان اور ملک کے لیے قربانیاں دے چکے ہیں مختلف جماعتوں کی حکومت میں بطور وفاقی وزیر بڑے منصوبوں پر کام کیا ملتان کو انٹرنیشنل ائیرپورٹ دلایا، سابق فوجی آمر پرویز مشرف کے خلاف آواز بلند کی، جمہوریت کے لیے قربانیاں دی، پانچ صدیوں سے انکا خاندان ملک کی خدمت میں مصروف ہے وہ خود بھی بطور ممبر پارلیمنٹ خدمات انجام دے چکی، والد پہلے مسلم لیگ ن کے صدر رہے بعدازاں حکومتی جماعت پاکستان تحریک انصاف کے صدر رہے جماعت سے نظریاتی تضاد پر علیحدگی اختیار کی گئی لیکن اب انہیں انتقامی کاروائی کا نشانہ بنایا جارہا ہے انتظامیہ نے ذاتی کروڑوں روپے کی بلڈنگ کو نقصان پہنچایا ہے اور مقبوضہ زمین کو محکمہ اوقاف کی زمین بتلا رہے ہیں عدالت عالیہ انصاف فراہم کرے۔

تعمیرات مسمار

مزید :

ملتان صفحہ آخر -