مشاورت نہ تجاویز حکومتی بجٹ کسی صورت قبول نہیں کرینگے: تاجروں کا اعلان 

مشاورت نہ تجاویز حکومتی بجٹ کسی صورت قبول نہیں کرینگے: تاجروں کا اعلان 

  

  ملتان (  نیوز  رپورٹر  )تاجر برادری نے حکومتی پالیسیوں کو یکسر مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ تاجروں سے مشاورت اور ان کی تجاویز کو شامل کیئے بغیر تیار کیا جانیوالا حکومتی(بقیہ نمبر39صفحہ6پر)

 بجٹ کسی صورت قبول نہیں کریں گے اگر حکومت نے کورونا وبا کے باعث مہینوں لاک ڈاون سے متاثر ہونیوالے تاجروں کو درپیش مسائل تحمل سے نہ سنے اور اضافی ٹیکسز مسلط کیئے تو تاجر برادری احتجاج کے لیئے سڑکوں پر آئے گی ان خیالات کا اظہار قومی تاجر اتحاد پاکستان کے صدر سلطان محمود ملک اور دیگر عہدیداران چوہدری شوکت علی، ملک اکرم سگو، ملک اقبال جاوید، مقبول کھوکھر، شیخ محمد سلیم، محمد آصف شاہ، ملک منیر لکھویرا، شیخ محمد عمر، ملک زبیر نعیم، ملک تنویر اعوان، ملک صابر علی، ملک امجد سیال، ملک اقبال ڈوگر اور سید محمد عارف شاہ نے پاکستان بجٹ فورم سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ حکومت کی ناقص پالیسیوں کے باعث ملک کا متوسط طبقہ بھی خط غربت سے نیچے چلا گیا ہے اور رہی سہی کسر کورونا اور لاک ڈاون نے پوری کردی ہے اس وقت تاجر برادی اپنے چولہے جلانے کے لیئے قرض لینے پر مجبور ہے مہنگائی کی وجہ سے خریداری بند ہو چکی ہے اور مارکیٹیں ویرانی کا منظر پیش کررہی ہیں چھوٹے تاجروں کی تعداد لاکھوں میں اور ہر شاپ پر موجود ملازم ایک خاندان کو سنبھال رہا ہے لاک ڈاون کے باعث لاکھوں گھروں کے چولہے ٹھنڈے پڑ چکے ہیں حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ایک کروڑ نوکریاں بھلے نہ دے لیکن جو برسر روزگار تھے انہیں گرنے سے بچانے کے اقدامات کرے انہوں نے کہا کورونا وبا نے ملک کے چھوٹے تاجروں کو تباہی کے دہانے پر پہنچادیا ہے روز روز کے لاک ڈاون نے کاروبار کو شدید متاثر کیا ہے حکومت کو چاہیئے کہ تاجروں کو ٹیکسز میں ریلیف دے اور بلاسود قرضے فراہم کرے تاکہ تباہی سے دوچار تاجر دوبارہ اپنے کاروبار کو فعال بناسکیں انہوں نے کہا کہ حکومت بجٹ کی تیاری میں اہم سٹیک ہولڈر تاجروں کو ہمیشہ نظر انداز کرتی آئی ہے جو کہ انتہائی غلط اقدام ہے جب تک تاجروں سے مشاورت نہیں کی جائے گی زمینی حقائق واضح نہیں ہوسکتے تاہم مشاورت سے متوازن بجٹ تیار کرنے میں مدد ملے گی انہوں نے مزید کہا کہ چھوٹے تاجروں کے لیئے بلاسود آسان شرائط پر قرضے فراہم کیئے جائیں ملکی مصنوعات میں استعمال ہونیوالے خام مال کی امپورٹ پر ڈیوٹی کم کی جائے پہلے سے ٹیکس نیٹ میں موجود ہیں ان پر مزید ٹیکسز کا بوجھ بڑھانے کی بجائے ٹیکس نیٹ کا دائرہ وسیع کیا جائے انہوں نے کہا کہ ہمیشہ عوام کو یہ نوید سنائی دیتی ہے کہ عوام دوست بجٹ آئے گا عمران خان اگر عوامی بجٹ اناونس کرنے میں مخلص ہیں تو جس طرح انہوں نے ملک کے صنعتکاروں کو مختلف سیکٹرز میں ریلیف دیا ہے اسی طرز پر چھوٹے تاجروں کو بھی ٹیکسز اور بجلی کے بلوں میں ریلیف دیں کورونا نے ملک کے اکثریتی متوسط طبقے کی چولہیں ہلا کر رکھ دی ہیں ڈیڑھ سال کے اس عرصہ میں متوسط طبقہ بھی خط غربت سے نیچے چلا گیا ہے حکومت سے مطالبہ ہے کہ وہ بجٹ میں چھوٹے تاجروں کو ہرممکن ریلیف فراہم کرے۔

سلطان محمود

مزید :

ملتان صفحہ آخر -