پاکستان میں سالانہ 756ارب روپے کی منشیات استعمال کرنیکا انکشاف 

پاکستان میں سالانہ 756ارب روپے کی منشیات استعمال کرنیکا انکشاف 

  

 جام پور(نمائندہ پاکستان)ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان میں 80لاکھ افراد نشے کی لت میں مبتلا ہیں اور(بقیہ نمبر35صفحہ6پر)

(بقیہ نمبرصفحہ6پر) سالانہ 756ارب روپے کی منشیات استعمال کر رہے ہیں،2018ء میں خود وفاقی وزیر نے ایک تقریب میں دعویٰ کیا تھا کہ اسلام آباد کے اعلیٰ سطح سکولوں میں 75فیصد طالبات اور 55فیصد طلبہ منشیات استعمال کرتے ہیں،پاکستان میں عام نشہ چرس ہے جس کا شکار آبادی کا 3.6فیصد حصہ ہے نشہ کرنے والے افراد کی اکثریت 20سے 40سال کی عمر میں ہیں،حکومتی اعدادو شمار کے مطابق چرس میں مبتلا افراد کی تعداد 50لاکھ ہے جبکہ 10لاکھ 60ہزار افراد ہیروئین کا شکار ہیں،ٹیکے کے ذریعے نشہ کرنے والے افراد کی تعداد 6لاکھ 30ہزار ہے اسی اطرح افیون کے نشہ کے شکار افراد کی تعداد4لاکھ 20ہزار ہے،ایک رپورٹ کے مطابق گزشتہ سال نشہ سے 1235افراد کی موت واقع ہوئی صرف لاہور میں ماہانہ اوسط 9کروڑ روپے کا نشہ کیا جاتا ہے،پاکستان کا سب سے بڑا شہر کراچی منشیات کی منڈی بن چکا ہے،کراچی میں نشئیوں کی تعداد50ہزار سے زائد ہے،کراچی میں ماہانہ اوسط 45کروڑروپے کا نشہ کیا جا تا ہے،ڈرگ کنسلٹنٹ کے مطابق پاکستان میں 80لاکھ نشے کے عادی افرادہیں جنہوں نے ایک سال کے دوران 756ارب روپے کا اوسط نشہ کیا،منشیات کا دھندہ مقامی با اثر افراد اور پولیس کی معاونت کے بغیر نہیں ہو سکتا،پاکستانی حکام کے لئے یہ امر تشویش کا باعث ہے کہ ہر سال 350ٹن سے زائدافغانی منشیات پاکستان میں استعمال ہوتی ہے،ملک میں نشے کے عادی کم از کم ساڑھے 6لاکھ لوگوں کو اگر روزانہ کی بنیاد پر ہیروئین کی خوراک نہ ملے تو ان کی موت واقع ہو سکتی ہے،اقوام متحدہ کے ادارے نے کہا کہ حکومت پاکستان منشیات کے خاتمہ کو سنجیدگی سے نہیں لے رہی ہے،اینٹی نارکوٹکس فورس کے عملہ کی تعداد اس قدر کم ہے کہ وہ حساس پوائنٹس پر منشیات کے سمگلروں کی سرگرمیوں کو نہیں روک سکتے اگر پاکستان کو منشیات سے پاک ریاست نہ بنایا گیا تو مختلف ممالک اور یو این او پاکستان کی امداد بند کردیں گے جو منشیات کی روک تھام او ر نشئیوں کی بحالی کے لئے فراہم کی جا رہی ہے،حکومت کو چاہیے کہ منشیات کی خریدو فروخت کے خلاف مؤ ثر اقداما ت کرے اور نشئیوں کی بحالی کے لئے نئے سنٹرز قائم کرے۔

منشیات

مزید :

ملتان صفحہ آخر -