ایران، ترکی اور پاکستان کے مابین مال بردار ٹرین شروس شروع کی جائے: ضیاء الحق سرحدی 

ایران، ترکی اور پاکستان کے مابین مال بردار ٹرین شروس شروع کی جائے: ضیاء الحق ...

  

پشاور(سٹی رپورٹر)فیڈریشن آف پاکستان چیمبر آف کامرس اینڈانڈسٹری (FPCCI)کی سنٹرل سٹینڈنگ کمیٹی برائے پاکستان ریلوے کے کنونیئر اور افغان ٹرانزٹ ٹریڈ سنٹرل سٹینڈنگ کمیٹی کے ڈپٹی کنونیئر  ضیاء الحق سرحدی نے وفاقی حکومت سے درخواست کی ہے کہ وفاقی حکومت ترکی، ایران اور پاکستان کے مابین مال بردار ٹرین سروس کی بحالی کے لئے موثر اقدامات اٹھائیں کیونکہ ترکی، ایران اور پاکستان کے مابین مال بردار ٹرین سروس تجارت کا ایک بہترین ذریعہ ہے اس سے نہ صرف سامان پر ٹیکس کی شرح کم ہو گی بلکہ سامان ہفتوں کی بجائے چند دنوں میں کم خرچ پر کسی بھی ملک پہنچ جائے گا جس سے نہ صرف تجارت میں بہتری آئے گی بلکہ دو طرفہ تعلقات بھی مضبوط اور مستحکم ہونگے۔ضیاء الحق سرحدی جو کہ پاک افغان جائنٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری (PAJCCI) اور سرحد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سابق سینئر نائب صدر بھی ہیں نے کہا کہ اگر ٹرین کو تین ملکوں میں مذہبی و سیاحت کے لئے بھی شروع کی جائے تو اس سے نہ صرف سیاحت کو فروغ ملے گا بلکہ کم پیسوں میں لوگوں کو تفریح بھی مہیا ہو گی جبکہ تینوں ممالک کے زرمبادلہ میں بھی اضافہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان اس معاملے میں ذاتی دلچسپی لے کر مال بردار ٹرین کے ساتھ ساتھ ایک سیاحتی ٹرین کا بھی اعلان کریں جبکہ اس اقدام سے انسانی سمگلنگ کی حوصلہ شکنی ہوگی اور لوگ غیر قانونی بارڈر کراس کرکے دوسرے ملک میں جانے کی بجائے قانونی طور پر آسان راستے کا انتخاب کریں گے اور یقینی طور پر اس میں تینوں ملکوں کو فائدہ ہوگا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -