خیبر پختونخوا کنٹرول آف نارکوٹک سبسٹانسز ایکٹ 2019 کے تحت سزا سنا دی گئی

  خیبر پختونخوا کنٹرول آف نارکوٹک سبسٹانسز ایکٹ 2019 کے تحت سزا سنا دی گئی

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا کنٹرول آف نارکوٹک سبسٹانسز ایکٹ 2019 کے تحت درج ہونے والے منشیات سمگلنگ کیس میں پہلی سزا سنا دی گئی،تفصیلات کے مطابق ایکسائز انٹیلجنس بیورو-4 کے انچارج انسپکٹر ریاض خان اور سب انسپکٹر اذلان اسلم نے 14-12-2019 کو خفیہ اطلاع پر صوابی جہانگیرہ روڈ پر کارواء کرتے ہوئے ہوئے دو ملزمان ارسلان ایوب ترین اور عرفان گل کو گرفتار کرکے انکی گاڑی سے 25 کلوگرام چرس برآمد کی- دونوں ملزمان کے خلاف صوبے کے نئے انسداد منشیات ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا گیا- پراسیکیوشن کی جانب سے محمد ریاض انسپکٹر اور ازلان اسلم سب انسپکٹر گواہان پیش کئے گئے جن پر مخالف وکیلوں کی جانب سے سخت جرح کی گئی- عدالت جناب عطاء اللہ جان ایڈیشنل سیشن جج چھوٹا لاہور صوابی نے گواہان اور ثبوتوں کی روشنی میں دونوں ملزمان ارسلان ایوب ترین اور عرفان گل کو عمر قید اور پانچ پانچ لاکھ جرمانے کے سزا سنادی جبکہ ملزم عرفان گل جو کہ عدالت سے ضمانت پر تھا، اسکو کمرہ عدالت میں ہی گرفتار کرلیا گیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -