بچوں کے بحالی سنٹرز میں ٹیکنیکل ایجوکیشن شروع کرنے کے احکامات جاری 

  بچوں کے بحالی سنٹرز میں ٹیکنیکل ایجوکیشن شروع کرنے کے احکامات جاری 

  

 پشاور(نیوزرپورٹر)پشاور ہائیکورٹ نے محکمہ سماجی بہبود کو سٹریٹ چلڈرن کی بحالی سنٹرز میں ٹیکنیکل ایجوکیشن شروع کرنے کے لئے اقدامات اٹھانے کے احکامات جاری کردئیے ہیں جبکہ چیف جسٹس جسٹس قیصررشید نے ریمارکس دیئے کہ ایک وقت کا کھانا یا فوڈ پیکٹ دینے سے بہتر ہے بچوں کو  فنی تعلیم دی جائے تاکہ یہ بچے بھیک مانگنے کی بجائے اپنا روزگار کریں جسٹس اعجاز انور نے ریمارکس دیئے کہ ایک وقت کا کھانا دینے سے کچھ نہیں ہوتا ان بچوں کے فیملی بیک گراونڈ بھی دیکھنا ہوگا لوگوں کے پاس روزگار نہیں ہے ان کی فیملی کو جب تک آپ سپورٹ نہیں کریں گے یہ سلسلہ ایسے ہی چلتا رہے گا کیس کی سماعت چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ جسٹس قیصررشید اور جسٹس اعجاز انور پر مشتمل دو رکنی بینچ نے کی کیس کی سماعت شروع ہوئی تو سیکرٹری سوشل ویلفیئر اور ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل سید سکندر شاہ عدالت میں پیش ہوئے سیکرٹری سوشل ویلفیئر نے عدالت کو بتایا کہ حکومت نے ویلفیئر ہوم شروع کئے ہیں جن میں غریب بچوں کو کھانا بھی دیا جاتا ہے جس پر جسٹس اعجاز انور نے کہا کہ  ایک وقت کا کھانا دینے سے کچھ نہیں ہوتا ان بچوں کی فیملی بیک گراونڈ بھی دیکھنا ہوگا۔ لوگوں کے پاس روزگار نہیں ہے ان کی فیملی کو جب تک آپ سپورٹ نہیں کرے گے یہ سلسلہ ایسے ہی چلتا رہے گ چیف جسٹس نے کہا کہ سٹریٹ چلڈرن کی بحالی کے لئے جو سنٹرز قائم ہے وہاں پر بچوں کو ٹیکنیکل ایجوکیشن دینے کے لئے اقدامات کریں۔ اس موقع پر ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل سید سکندر شاہ نے عدالت کو بتایا کہ بھیک مانگنے والے زیادہ تر دوسرے صوبوں سے یہاں آئے ہیں یہ لوگ یہاں مختلف سڑکوں کے کنارے خیمے لگا کر  آباد ہوئے ہیں اور بھیک مانگ رہے ہیں چیف جسٹس نے اے اے جی اسے استفسار کیا کہ نشئی افراد کی بحالی کے لئے کیا اقدامات ہورہے ہیں۔ جس پر انہوں نے عدالت کو بتایا کہ  پشاور کے علاقہ فقیر آباد میں سٹریٹ چلڈرن کے لئے جو سنٹر تھا وہاں سے بچوں کو زمونگ کور منتقل کیا ہے اب وہاں پر نشئی افراد کی بحالی کے لئے کام کررہے ہیں جبکہ سیکرٹری سوشل ویلفیئر نے عدالت کو بتایا کہ  112 نشئی افراد وہاں پر موجود ہیں ان کی بحالی کے لئے کام کررہے ہیں۔ جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ یہ بہت اچھی بات ہے کہ اس بلڈنگ کو اچھے کام کے لئے استعمال کررہے ہیں فاضل بینچ نے سوشل ویلفیئر ڈیپارٹمنٹ کو سٹریٹ چلڈرن کے لئے قائم سنٹرز میں ٹیکنیکل ایجوکیشن دینے کے لئے دو ماہ کے اندر  اقدامات کرنے  اور رپورٹ عدالت میں جمع کرنے کا حکم دیتے ہوئے سماعت 22 ستمبر تک ملتوی کردی۔

مزید :

صفحہ اول -