نیشنل بینک کے پنشنرز نے ٹیکس عائد کرنے کامجوزہ فیصلہ مسترد کردیا

نیشنل بینک کے پنشنرز نے ٹیکس عائد کرنے کامجوزہ فیصلہ مسترد کردیا

  

لاہور(این این آئی)نیشنل بینک آف پاکستان پنشنرز ایکشن کمیٹی اور پاکستان ایکس ایمپلائز ویلفیئر ایسوسی ایشن نے پنشنرز پر ٹیکس عائد کرنے کے مجوزہ فیصلے کو سختی سے مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ مشکلات کا شکار پنشنرز پر ٹیکسز کا بوجھ نہ ڈالا جائے  بینک انتظامیہ نظر ثانی کی اپیل واپس لے کر عدالتی فیصلوں کے مطابق پنشنرز کے واجبات ادا کرے، اگر ہمارے مطالبات تسلیم نہ کئے گئے تو پنشنرز بھوک ہڑتال، ہیڈ آفس کا گھیراؤ اور ڈی چوک اسلام آباد میں احتجاج کرنے پر مجبور ہوں گے۔ایکشن کمیشن اور ویلفیئر ایسوسی ایشن کا مشترکہ اجلاس سرپرست اعلیٰ محمد سلیم بٹ، وائس چیئرمین جاوید احمد خان اورسیکرٹری جنرل ظفر صادق کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں ملک بھر سے عہدیداروں نے بذریعہ ویڈیو لنک شرکت کی۔ سیکرٹری اطلاعات طارق سعید بٹ نے بتایا کہ اجلاس میں بینک لاء چارجز اکاؤنٹ پنشنرز کے خلاف استعمال کرنے کی مذمت کی گئی او رمطالبہ کیا گیا ہے کہ اس کا آڈٹ کرایا جائے،بینک پینل پر ہزاروں وکلاء کی موجودگی کے باوجود کروڑوں روپے فیس ادا کر کے پینل سے باہر کے وکلاء کے خدمات کیوں حاصل کی گئیں اور ذمہ داروں سے اس کی وصولی کی جائے، بینولینٹ فنڈ کی ادائیگی تاحیات کی جائے،کیموٹیشن پیریڈ مکمل ہونے کے بعد عدالت عظمیٰ کے فیصلے کے مطابق پنشن دو گنا کی جائے، میڈیکل پالیسی پر وعدے کے مطابق عمل کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ اگر ہمارے مطالبات تسلیم نہ کئے گئے تو ملک بھر کے پنشنرز بھوک ہڑتال،نیشنل بینک کے ہیڈ آفس کا گھیراؤ او رڈی جی چوک اسلام آباد میں مظاہرہ کرنے پر مجبور ہوں گے۔

فیصلہ مسترد

مزید :

پشاورصفحہ آخر -