رحیم یارخان:نوجوان اغوا،ورثاسے اڑھائی کروڑ روپے تاوان طلب 

رحیم یارخان:نوجوان اغوا،ورثاسے اڑھائی کروڑ روپے تاوان طلب 

  

 رحیم یارخان(نمائندہ پاکستان)کاروباری رنجش پر ملزمان نوجوان کو (بقیہ نمبر5صفحہ6پر)

اغوا کرکے سندھ لے گئے مغوی کے والد سے بذریعہ فون اڑھائی کروڑ روپے تاوان طلب کرنے لگے پولیس اے ڈویژن نے ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کرلیا مغوی تاحال بازیاب نہ ہوسکا۔ تفصیل کے مطابق جناح پارک کے رہائشی ارشاد احمد نے پولیس تھانہ اے ڈویژن میں دی جانے والی درخواست میں موقف اختیار کیا کہ اس کے بیٹے محمد سفیان نے محمد اشرف محمد ارشاد کے ساتھ سانگھڑ سندھ میں سانگھڑ فلور مل کے نام سے کاروبار شروع کیا اور رجب علی کو منیجر جبکہ شہباز کو بطور کلرک رکھا بعدازاں کاروباری نقصان کی وجہ سے فلور مل بند ہو گئی اور سفیان نے اپنا حصہ واپس لے لیا جس کے چند روز بعد 4 جون کو سفیان کو ارشاد اشرف رجب شہباز وغیرہ نے کال کرکے اقبال نگر بلوایا کہ سانگھڑ مل دوبارہ چلا رہے ہیں تو سانگھڑ چلتے ہیں اور اسے سندھ لے جا کر یرغمال بنا لیا اور اب اس کی رہائی کیلئے فون کرکے اڑھائی کروڑ روپے تاوان طلب کر رہے ہیں۔ پولیس نے مغوی سفیان کے والد ارشاد احمد کی رپورٹ پر مقدمہ درج کر لیا تاہم مغوی بازیاب ہوا اور نہ ہی ملزمان کی گرفتاری عمل میں لائی جا سکی ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -