کارانداز اور پاکستان فن ٹیک کی شراکت داری 

 کارانداز اور پاکستان فن ٹیک کی شراکت داری 

  

 لاہور(پ ر) کارانداز پاکستان اور پاکستان فن ٹیک نیٹ ورک (پی ایف این) نے ملک میں فن ٹیک ایکو سسٹم میں  معاونت کیلئے اسلام آباد میں معاہدہ پر دستخط کئے ہیں۔اس معاہدہ کے تحت کارانداز نے فن ٹیک پروگرام کو عملی شکل دینے اور کامیابی کے ساتھ چلانے کیلئے پی ایف این کو گرا نٹ فراہم کرنے کا وعدہ کیا ہے جس سے فن ٹیک انڈسٹری کیلئے مزید سازگار ماحول کو فروغ ملے گا۔ پی ایف این 52سے زائد اراکین پر مشتمل نیٹ ورک ہے، یہ شراکت داری فن ٹیک ایکو سسٹم سے مزید کمپنیوں کو مصروف عمل کرنے میں مدد دے گی اور پی ایف این کی انفارمیشن اور آئیڈیاز حب کے طور پر صلاحیت کو تقویت دینے کے ساتھ ساتھ ریگولیٹرز، کارپوریشنوں، صارفین، ٹیکنالوجی وینڈرز، انٹرپرینورز، اکیڈمیہ، ڈونرز اور انویسٹرز کے درمیان مزید اشتراک یقینی بنائے گی۔ کاراندازایک غیر منافع بخش ادارہ ہے جسے اگست2014 میں سیکشن 42 کے تحت قائم کیا گیا۔کارانداز انٹرپرائز اینڈ ایسٹ گروتھ پروگرام (ای اے جی آر) اور برطانیہ فارن، کامن ویلتھ اینڈ ڈویلپمنٹ پروگرام سسٹین ایبل انرجی اینڈ اکنامک ڈویلپمنٹ (سیڈ) کا عمل درآمدی شراکت دار ہے۔  سیڈ کو ایف سی ڈی او جبکہ ای اے جی آر کو ایف سی ڈی او اور بل اینڈ ملینڈا گیٹس فاؤنڈیشن کی طرف سے گرانٹ کی بنیاد پر فنڈز ملتے ہیں۔ کارانداز  انفرادی طور پر کمرشل ذرائع سے سرمایہ کاری اور مالیاتی اشتراک کے ذریعے چھوٹے کاروباروں کیلئے مالیاتی سہولیات تک رسائی دینا ہے۔ ایک اندازے کے مطابق، پاکستان کی ڈیجیٹل فنانس صلاحیت 2025 تک تقریباً 36 بلین ڈالر  ہوگی، جس میں جی ڈی پی میں 7 فیصد اضافے، 40 لاکھ نئی ملازمتیں پیدا کرنے اور 263 بلین ڈالر کے نئے ڈیپازٹس کی صلاحیت ہے۔

مزید :

کامرس -