جماعت سلامی وفد کی ایف پی سی سی آئی کے صدر سے ملاقات

جماعت سلامی وفد کی ایف پی سی سی آئی کے صدر سے ملاقات

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)مرکزی نائب امیر وسابق ایم این اے اسداللہ بھٹو کی قیادت میں جماعت اسلامی کے وفد نے وفاق ایوان ہائے تجارت وصنعت پاکستان (FPCCI)کے صدر عرفان اقبال شیخ سے ملاقات کی، جنہیں وفاقی شرعی عدالت کے سودی نظام کے فیصلے اور اس پر عملدرآمد کے حوالے سے تاجر برادری کی جانب سے اپنا بھرپور کردار ادا کرنے پر زور دیا، وفد میں صوبائی امیرسابق ایم این اے محمد حسین محنتی،سیکریٹری اطلاعات مجاہد چنااورا سمال ٹریڈرز کراچی کے صدر محمود حامد جبکہ ایف پی سی سی آئی کے نائب صدرمحمد سلیمان چاولہ دیگر عہدیداران بھی ساتھ موجود تھے۔ اسداللہ بھٹو نے کہا کہ سود کو اللہ نے حرام اور سود لینے ودینے والوں کیلئے اللہ اور رسولؐ کا اعلان جنگ ہے، ہمارے دستور میں بھی واضح طور پرلکھا ہوا ہے کہ قرآن وسنت کیخلاف کوئی بھی چیز نہیں ہوگی،قیام پاکستان کے بعد اسٹیٹ بنک آف پاکستان کا افتتاح کرتے ہوئے بانی پاکستان حضرت قائداعظم محمد علی جناحؒ نے واضح اعلان کیا تھا کہ پاکستان کا معاشی نظام مغربی اصولوں پر نہیں بلکہ اسلامی تعلیمات کے حوالے سے تشکیل دیا جائے گا مگر ان کی رحلت کے بعد یہ اعلان فائلوں میں تو محفوظ رہا لیکن عملی طور پر پاکستان کے تمام معاشی فیصلے اور معاہدات مغربی اصولوں کے حوالے سے ہوئے جو کہ اب تک ہورہے ہیں۔یہاں تک کہ 1956اور1962کے بعد1973؁ کے دستور میں بھی واضح ہدایت ہے کہ جلد از جلد سودی قوانین کاخاتمہ کرکے ملک کے نظام معیشت کو اسلامی اصولوں کے دائرے میں لے آئے مگر ہر آنے والی حکومت نے قیام پاکستان کے مقاصد اور بانی پاکستان کے فرمودات کو پس پشت ڈال کر غیروں کے ایجنڈے کو آگے بڑھایا ہے،وفاقی شرعی عدالت کے واضح فیصلے پر اب حکومت وقت کا فرض ہے کہ وہ عذاب الٰہی کو مزید دعوت دینے کی بجائے عدالتی فیصلے کے روح والفاظ کے مطابق عمل درآمد کو یقینی بنائے، تاجر برادری بھی حکومت پردباء ڈال کر اس فیصلے پر عمل درآمد کیلئے اہم رول ادا کرسکتی ہے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -