تعمیراتی میٹریل کی قیمتوں میں اضافہ تشویشناک،کوئی نیا ٹیکس نہ لگایا جائے : رئیل اسٹیٹ ایجنٹس پھٹ پڑے

تعمیراتی میٹریل کی قیمتوں میں اضافہ تشویشناک،کوئی نیا ٹیکس نہ لگایا جائے : ...
تعمیراتی میٹریل کی قیمتوں میں اضافہ تشویشناک،کوئی نیا ٹیکس نہ لگایا جائے : رئیل اسٹیٹ ایجنٹس پھٹ پڑے

  

لاہور (میاں اشفاق انجم سے) بجٹ سے پہلے سیمنٹ اور بلڈنگ میٹریل سٹور کی قیمتوں میں بے تحاشا اضافہ لمحہ فکریہ ہے۔وفاق اور صوبے سی وی اور شٹام ڈیوٹی کی قیمتوں میں اضافے سے باز رہیں۔اوورسیز پاکستانیوں کے لئے گھر بنانے اور پراپرٹی خریدنے کے حوالے سے ایمنسٹی سکیم دی جائے۔پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ واپس لیا جائے۔ ان خیالات کا اظہار جوہر ٹاؤن، واپڈا ٹاؤن،ایل ڈی اے،ایونیو ون ویلیشیا کے سینئر ترین رئیل اسٹیٹ ایجنٹس نے روزنامہ ”پاکستان“ سے خصوصی گفتگو میں کیا۔ احسان الحق چودھری نے کہا کہ عوام دوست بجٹ دیا جائے۔ چودھری شفقت بندیشہ نے کہا سیمنٹ، بجری اور دیگر میٹریل کی قیمتوں میں بجٹ سے پہلے اضافہ خطرے کی گھنٹی ہے۔ایم اے صدیقی نے بیرون ملک بسنے والوں سے ووٹ کا حق واپس لینے کے فیصلے کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے حقیقی محسن اوورسیز پاکستانی ہیں۔میاں شاہ جہاں،چودھری محمد اکبر نے کہا ہے بلڈر، ڈویلپرز اور پراپرٹی ڈیلرز کو آن بورڈ لیا جائے۔عاصم فیاض نے کہا کہ حکومت سی وی ٹی اور اشٹام ڈیوٹی میں اضافے سے باز رہے ورنہ سخت ردعمل آئے گا۔بلال منہاس نے کہا ہے وزیراعظم سے بڑی امیدیں وابستہ ہیں عملاً کچھ کر کے دکھائیں۔میاں رمضان نے کہا رئیل سٹیٹ سیکٹر ملکی معیشت کی مضبوطی میں اہم کردار ادا کر سکتا ہے۔ بجٹ میں کوئی نیا ٹیکس نہ لگایا جائے۔عامر فیاض نے پٹرول مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ واپس لینے کا مطالبہ کیا۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -