پریٹوریامیں پاکستان ایمبیسی کے سامنے احتجاجی مظاہرہ

پریٹوریامیں پاکستان ایمبیسی کے سامنے احتجاجی مظاہرہ

جوہانسبرگ(ندیم بشیر)پریٹوریامیں پاکستان ایمبیسی کے سامنے پاکستانیوں کی بہت بڑی تعداد نے احتجاجی مظاہرہ کیا جس میں عورتیں اور بچے بھی شامل تھے۔لوگوں کا مطالبہ تھا کہ اگر ہم سفارتخانے سے پاسپورٹ بنوائیں اور انہیں پاسپورٹ کی تصدیق کیلئے جائیں توہمیں کہا جاتا ہے کہ پاکستان سے تصدیق کروائیں جبکہ پہلے سب کچھ تفارتخانے سے ہی تصدیق ہوا کرتا تھا لوگوں کو بہت بڑی تعداد نے سیکرٹری حسن اور خالد ترین کے خلاف شکایات کے انبارلگادیئے لوگوں کا کہنا تھا کہ ہمارے ساتھ سیدھے منہ سے بات نہیں کی جاتی جیسے کہ ہم لوگ کسی اور ملک سے ہوں احتجاج میں شریک میاں عرفان ،سلمان سلیم ،میاں جعفر ،احمد رضا،عثمان لطیف،راجا محسن ،اعظم دلپریز،عثمان اور ارسلان نے کہا کہ اگر ہم لوگ اپنے آپ کو اپنے ہی سفارتخانے میں آکر غیر محسوس کریں تو پھر سفارتخانے کا کیا فائدہ یہ لوگ ہماری خدمت کیلئے تعینات کئے گئیں نہ کہ ہماری بے عزتی کیلئے لوگوں نے وزیراعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف سے مطالبہ کیا کہ ان دونوں افسروں کو جنوبی افریقہ فوری طورپر پاکستان بلایاجائے اور کوئی رحمدل شفیق اور لوگوں سے اچھے اخلاق سے پیش آنے والے افسروں کو جنوبی افریقہ میں انکی جگہ تعینات کیا جائے۔

مزید : عالمی منظر