آرگنائزرز اور عازمین حج کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے گا، عرفان صدیقی

آرگنائزرز اور عازمین حج کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے گا، عرفان ...

لاہور ( ڈویلپمنٹ سیل) وزیر اعظم نواز شریف کے معاون خصوصی برائے قومی امور عرفان صدیقی نے کہا ہے کہ حج آرگنائزرز اور عازمین حج کے مسائل کو ترجیی بنیادوں پر حل کیا جائے گا وہ پاکستان حج آرگنائررز ایسوسی ایشن (ہوپ)کے وفد سے گفتگو کررہے تھے جس نے چیرمین حاجی مقبول احمد کی قیادت میں وزیر اعظم سیکرٹریٹ میں ا ن سے ملاقات کی انہوں نے کہا کہ ان کا حجاج اور حج میں خدمات سرانجام دینے والے آرگنائررز کے ساتھ خصوصی رشتہ ہے آرگنائررز کے لیے حجاج کی خدمت حصول رزق کے ساتھ ساتھ حصول ثواب کا ذریعہ بھی ہے اور پاکستان کا سعودی عرب میں حج خدمات میں 11ویں نمبر سے 2نمبر تک آجانا پرائیویٹ سکیم کی بدولت ہے اس کو ناصرف جاری رکھا جائے گا بلکہ مزید سرکاری کوٹہ پرائیویٹ کیا جائے گا اور اس سلسلہ میں قانون سازی بھی کی جائے گی جس کے لیے وزرات مذہبی امور ورکنگ کررہی ہے عرفان صدیقی نے کہا کہ وزیر اعظم نواز شریف کا عزم ہے کہ عازمین حج کو دستیاب وسائل میں ہر ممکن سہولت فراہم کی جائے اور حج پالیسی کو شفاف بنایا جائے انہوں نے کہا کہ حج آرگنائررز 90ہزار عازمین حج کو سروسز فراہم کرتے ہیں اس لیے حکومت کا حصہ ہیں۔ ۔ ہوپ پاکستان کے سیکرٹری جنرل ثناء اللہ خان نے کہا کہ پرائیویٹ سکیم کے اجراء سے سعودی حکومت مطمئن ہے کیوں کہ اس سے قبل عازمین حج کی شکایات پر وہ حکومت پاکستان کے خلاف کوئی کاروائی نہیں کرسکتے تھے اب حج آرگنائزرز کی فوری گرفت کرلی جاتی ہے اور عازمین حج کو بھی ان کی ضرورتوں اور بجٹ کے مطابق سہولتیں مل رہی ہیں۔ چیرمین ہوپ حاجی مقبول احمد نے کہا کہ یہ تاثر غلط ہے کہ پرائیویٹ پیکج مہنگے ہیں پرائیویٹ پیکج لوگوں کی ضرورتوں کو سامنے رکھ کر بنائے جاتے ہیں اس لیے سرکاری پیکج سے مہنگے ہیں۔جنرل سیکرٹری پنجاب احسان اللہ نے کہا کہ ایسوسی ایشن نے اپنے پلیٹ فارم پر بھی خود احتسابی کا نظام بنا رکھا ہے جس کے تحت آرگنائررز کی سخت مانیٹرنگ کی جاتی ہے پاکستانی اور سعودی وزارت حج کا مانیٹرنگ سسٹم اس کے علاوہ ہے ۔وفد نے مطالبہ کیا کہ حکومتی سطح پر آرگنائزرز کو باوقار مقام دیا جائے اور وزیر اعظم نواز شریف سے ہوپ کی قیادت کی ملاقات کا اہتمام کیا جائے۔ہوپ کے وفد میں مرکزی راہنماؤں سمیت صوبائی ومقامی راہنما جن میں مسعود شنواری ، حاجی عبدالرزاق ،وحید بٹ ،جاوید اختر ،احسان اللہ ،حافظ شفیق کاشف ،حاجی ریاض احمد اور امداد اللہ بھی شامل تھے۔

مزید : صفحہ آخر