ملائشین ائیر لائنز کا مسافر طیارہ تباہ 239افراد کی ہلاکت کا خدشہ

ملائشین ائیر لائنز کا مسافر طیارہ تباہ 239افراد کی ہلاکت کا خدشہ

                                                        کولالمپور/تھوچھو ( آن لائن ) ملائیشیا کے دارالحکومت کوالا لمپور سے چین کے شہر بیجنگ جانے والا مسافر طیارہ 14 ویت نام کے جزیرے تھوچھو کے نزدیک سمندر میں گر کر تباہ ہو گیا ہے،طیارے میں 227 مسافراور عملے کے 12 افراد سوار تھے جن میں سے 160مسافروں کاتعلق چین سے تھا۔غیرملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق قومی ایئر لائن کی پرواز ایم ایچ 370 کا طیارہ بوئنگ 777 جمعے اور ہفتہ کی درمیانی شب کوالالمپور کے ہوائی اڈے سے اڑی جسے مقامی وقت کے مطابق صبح ساڑھے 6بجے بیجنگ پہنچنا تھا تاہم اڑنے کے 2 گھنٹے بعد ہی طیارے کا رابطہ ٹریفک کنٹرول روم سے منقطع ہو گیا، طیارے میں 14 ممالک کے 227 مسافروں اور عملے کے 12 افراد شامل تھے۔ ملائیشیا ایئر لائن کے سربراہ احمد جوہری کا کہنا ہے طیارے کا کنٹرول ٹاور سے رابط منقطع ہو نے پر سرچ آپریشن شروع کردیا گیا جس کے بعد معلوم ہوا کہ طیارہ ویت نام کے تھوچھوجزیرے کے نزدیک سمندر میں گر کر تباہ ہو گیا ہے طیارے میں سوار مسافروں کے رشتہ داروں سے رابطے میں ہیں اور سمندر میں طیارے کی تلاش اور لاشوں کو نکالنے کا کام جاری ہے۔مسافر طیارہ ملائشیا کے 53سالہ پائلٹ ظہارے احمد شاہ ا±ڑا رہے تھے۔ ادھر چینی حکام کا کہنا ہے کہ تباہ ہونے والا طیارہ چین کی فضائی حدود میں داخل ہی نہیں ہوا اور نہ ہی اس کے عملے نے چینی ایئر ٹریفک کنٹرول سے رابطہ کیا، طیارے کا ریڈار سے رابطہ ممکنہ طور پر ویتنام کی فضائی حدود میں منقطع ہوا۔ بد قسمت طیارے میں سوار160مسافروں کاتعلق چین سے تھاملائیشیا ایئر لائن ایشیا کی بڑی فضائی کمپنیوں میں سے ایک ہے اور روزانہ اس پر 37 ہزار مسافر دنیا بھر میں 80 مقامات کا سفر کرتے ہیں۔ طیارے میں ملائشین ،فرانسیسی،امریکی ،چینیوں سمیت 13ممالک کے مسافرسوارتھے۔ایئر لائن کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق مسافروں میں چین کے 152، ملائنشیا کے اڑتیس، انڈونیشیا کے بارہ، آسٹریلیا کے سات، امریکا اور فرانس کے تین تین، نیوزی لینڈ، یوکرائن اور کینیڈا کے دو دو اٹلی، تائیوان، ہالینڈ اور آسٹریا کا ایک ایک شہری شامل ہیں جن میں دو شیر خوار بچے اور عملے کے بارہ ارکان شامل ہیں۔

طیارہ تباہ

مزید : صفحہ اول