بھینی شفیع سندھیلہ میں پولیس گردی کیخلاف مکینوں کا احتجاجی مظاہرہ

بھینی شفیع سندھیلہ میں پولیس گردی کیخلاف مکینوں کا احتجاجی مظاہرہ

ملتان (کرائم رپورٹر) کتے کو فائر مار کر ہلاک کرنے پر اہلیان علاقہ کی مشتاق احمد اے ایس آئی تھانہ صدر کی پٹائی کے معاملے کی آڑ میں پولیس نے بھینی شفیع سندھیلہ کے باسیوں کے گھروں کے گرد گرد پولیس چوکیاں قائم کردیں ہیں۔ گھریلو سامان ، زیورات ، نقدی ، مال مویشی ، موٹر سائیکل ، ٹریکٹر ٹرالیاں ، گندم زبردستی اٹھالئے بوڑھوں ، بچوں ، عورتوں کو یرغمال بنایا اور انہیں قید خانوں میں بند کردیا ۔(بقیہ نمبر62صفحہ12پر )

سابق صدر ہائیکورٹ سید اطہر حسن شاہ بخاری اور محمد اکرم سندھیلہ کی قیادت میں پولیس کی غنڈہ گردی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا ۔ مظاہرین نے الزام عائد کیا ہے کہ 3 مارچ کو مشتاق احمد اے ایس آئی اشتہاری ملزم اجمل کی تلاش میں جارہا تھا اور کتوں کے بھونکنے پر اپنے ہی پسٹل کے فائر سے کتے کو مار کر خود بھی فائر مار کر اپنے آپ کو زخمی کرلیا جس کی وجہ سے یہ اندوہناک واقعات رونما ہوا ۔اہلیان علاقہ نے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب ، آئی جی پنجاب ، سی پی او ملتان اور اعلیٰ عدلیہ و انتظامیہ سے انصاف کی اپیل کی ہے اور مطالبہ کیا ہے کہ ہمارے مال مویشی اور جملہ سامان مسروقہ ہمیں واپس دلایا جائے اور پولیس چوکیاں ختم کی جائیں اور خوف و ہراس کا ماحول ختم کیا جائے اور انہیں تحفظ فراہم کیا جائے ۔

مظاہرہ

مزید : ملتان صفحہ آخر