’اس نے اپنے جسم کا ایسا حصہ میرے منہ کے قریب رکھ دیا کہ غصے میں اسے مار ہی ڈالا‘ دبئی میں پاکستانی شہری نے اپنے ہم وطن کو مار ڈالا، وجہ ایسی جو آپ نے آج تک کبھی پاکستان میں نہ سنی ہوگی

’اس نے اپنے جسم کا ایسا حصہ میرے منہ کے قریب رکھ دیا کہ غصے میں اسے مار ہی ...
’اس نے اپنے جسم کا ایسا حصہ میرے منہ کے قریب رکھ دیا کہ غصے میں اسے مار ہی ڈالا‘ دبئی میں پاکستانی شہری نے اپنے ہم وطن کو مار ڈالا، وجہ ایسی جو آپ نے آج تک کبھی پاکستان میں نہ سنی ہوگی

  


دبئی سٹی (مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ عرب امارات میں کام کرنے والے ایک پاکستانی الیکٹریشن نے معمولی بات پر مشتعل ہوکر اپنے ہی ہم وطن کا گلا کاٹ ڈالا۔ گلف نیوز کی رپورٹ کے مطابق 22 سالہ پاکستانی الیکٹریشن اور اس کا ساتھی دوپہر کے وقفے کے دوران آرام کے لئے کمرے میں گئے تھے۔ ان کے سپر وائزر نے بتایا کہ اس نے وقفے کے دوران دونوں کو ائیر کنڈیشنڈ الیکٹریسٹی روم میں جاکر آرام کرنے کی اجازت دی تھی۔ لیکن کچھ ہی دیر بعد اسے پتہ چلا کہ دونوں میں شدید لڑائی ہوئی تھی۔ ساتھی محنت کشوں نے مداخلت کرکے لڑائی رکوائی لیکن چند لمحے بعد ہی 22 سالہ ملزم نے اپنے ہم وطن محنت کش پر حملہ کرکے اس کا گلا کاٹ ڈالا۔

’سعودی شوہر نے اپنی اہلیہ سے انتقام لینے کیلئے گاڑی نکالی اور۔۔۔ ‘پھر ایساکام ہوگیا کہ اپنے آپ کو ہی زوردار جھٹکا لگ گیا

ملزم نے پولیس کو بتایاکہ جب وہ آرام کے لئے لیٹے تو اس کے ساتھی نے اپنے پاﺅں اس کے منہ کے سامنے رکھ دئیے، جن سے شدید بدبو آرہی تھی۔ اس کا کہنا تھا کہ اس نے اپنے ساتھی کو پاﺅں پیچھے کرنے کو کہا مگر اس نے بات نہ مانی جس پر دونوں کے درمیان لڑائی ہوگئی۔ کچھ دیر بعد ملزم قریبی ویئر ہاﺅس گیا اور وہاں سے ایک تیز دھار استرا اٹھالایا جس کے ساتھ اپنے ہم وطن محنت کش کا گلا کاٹ ڈالا۔

خون میں لت پت نوجوان کو فوری طور پر ہسپتال لیجایا گیا لیکن وہ جانبر نہ ہوسکا اور تڑپ تڑپ کر جان دے دی۔ ملزم نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ وہ اپنے ساتھی محنت کش کو ہلاک نہیں کرنا چاہتا تھا بلکہ مشتعل ہوکر حملہ کر بیٹھا جو جان لیوا ثابت ہوا۔

مزید : عرب دنیا