عوام رابطہ مہم شروع، لبرل ، سیکولرازم جیسے لادین نظام کو بے نقاب کرینگے

عوام رابطہ مہم شروع، لبرل ، سیکولرازم جیسے لادین نظام کو بے نقاب کرینگے

لاہور(فورم رپورٹ:میاں اشفاق انجم)اسلامی پاکستان،خوشحال پاکستان، کرپشن فری پاکستان، جماعت اسلامی پاکستان نے ملک گیرعوامی رابطہ مہم شروع کر دی،چاروں صوبوں کے ڈویژنل ہیڈ کواٹر ز پر ورکرز کنونشن منعقد کرنے کا اعلان،رابطہ مہم میں گھر ،گھر ،دوکان دوکان،دفتر،دفتر جا کر کارکنان ملاقاتیں کریں گے،لاکھوں دعوتی کتب ،اسلامی لٹریچر اور ترجمان القرآن تقسیم کرنے کا منصوبہ ،جماعت اسلامی کی دعوت ،خدمات اور قربانیوں سے عوام کو اگاہ کیا جائے گا،یونین کونسل اور وارڈ کی سطح پر کیمپ بھی لگائیں گے،31مارچ تک جاری رہے گی ان خیالات کا اظہار جماعت اسلامی کی رابطہ عوام مہم کے کو آرڈینیٹر ڈپٹی سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان اظہر اقبال حسن نے روزنامہ پاکستان کے فورم میں ملک گیر عوامی رابطہ مہم کی تفصیلات بتاتے ہوئے کیا،انہوں نے کہا کہ50لاکھ نئے ممبران بنائیں گے،23مارچ کو ملک بھر میں عوامی مراکز میں سیمینار،فری میڈیکل کیمپ لگانے کا اعلان،اظہر اقبال حسن نے بتایا کہ جماعت اسلامی کے نا م کو 80فیصد مرد خواتین تک پہنچانا ہدف رکھا گیا ،تنظیمی حلقوں میں 25فیصد اضافہ کیا جانا ضروری ہو گا،کوآرڈینیٹر رابطہ عوام مہم نے بتایا ، لاکھوں مرد، خواتین، طلبہ، طالبات، نوجوان، ڈاکٹرز، انجینئرز، مزدور، کسان کارکنان ہر گھر، دکان دفتر پر دستک دے کر ملاقاتیں کریں گے، اسلامی نظام زندگی کی برکات سے عوام کو آگاہ کریں گے، لبرل ،سیکولر ازم جیسے لادین نظام کو بے نقاب کریں گے، ملاقاتیں کر کے اسلامی لٹریچر اور ترجمان القرآن پہنچائیں گے، اسلامی نظام زندگی اختیار کرنے، گھر سے لے کر معاشرے تک کو سود، نشہ، گناہ، فحاشی، کرپشن، جرائم سے پاک کرنے اور پاکستان کو اسلامی اور خوشحال بنانے میں ساتھ دینے پر ابھاریں گے،جماعت کی خدمات اور قربانیوں سے عوام کو آگاہ کیا جائے گا۔وہ صبح ہمیں سے آئے گی، اس صبح کو ہم ہی لائیں گے ، اس مقصد کیلئے ہینڈ بلز کی تقسیم، بینرز، پوسٹرز، ہورڈنگ بورڈز لگائے جائیں گے ۔ٹاؤن، محلے، وارڈ، گاؤں اور UC میں دعوتی کیمپ لگیں گے، کارنر میٹنگز، قرآن کلاس، درس قرآن، خطبات جمعہ اور اجتماع عام کیے جائیں گے، دفاتر اور گھروں پر پرچم کشائی کی جائے گی۔ جماعت میں شامل ہونے والوں سے ممبر فارم پر کروائے جائیں گے اور ان کے اعزاز میں شمولیتی پروگرام کیے جائیں گے۔

مزید : صفحہ آخر /رائے