مائیکر و فنانس سے مستفید صارفین کی مجموعی تعداد 9۔6ملین تک پہنچ گئی

مائیکر و فنانس سے مستفید صارفین کی مجموعی تعداد 9۔6ملین تک پہنچ گئی

اسلام آباد (اے پی پی)سال 2018ء کے دوران مائیکرو فنانس کے شعبہ میں قرضوں کے اجراء میں 20 فیصد کا اضافہ ہوا ہے اور دوران سال قرضہ کی سہولت سے مستفید ہونے والے صارفین کی تعداد میں 1.1 ملین کا اضافہ ہوا ہے ۔ 2018ء کے اختتام پر مائیکرو فنانس کی سہولت سے استفادہ کرنے والے صارفین کی مجموعی تعداد 6.9 ملین تک پہنچ گئی۔ پاکستان مائیکرو فنانس نیٹ ورک (پی ایم این) کے اعداد وشمار کے مطابق سال 2017ء کے مقابلہ میں گزشتہ سال 2018ء کے دوران شعبہ کے جاری کردہ قرضوں میں 36 فیصد کا اضافہ ہوا ہے اور دوران سال 275 ارب روپے کے قرضے جاری کئے گئے ہیں جو سال 2017ء کے مقابلہ میں 72 ارب روپے زائد رہے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق سال 2017ء کے اختتام پر مائیکرو فنانس کے شعبہ کے جاری کردہ قرضوں کا اوسط حجم 48 ہزار 695 روپے تھا جو سال 2018ء کے اختتام پر 55 ہزار 173 روپے کی اوسط تک بڑھ گیا۔ پی ایم این کی رپورٹ کے مطابق اس وقت ملک میں 42 ادارے مائیکرو فنانسنگ کی سہولیات فراہم کررہے ہیں جن میں مائیکرو فنانس بینکوں کی تعداد 12 ہے جبکہ 16 مائیکرو فنانس انسٹی ٹیوشنز بھی صارفین کو مائیکرو فنانس کی خصوصی خدمات فراہم کررہے ہیں۔ اس طرح رورل سپورٹ کے 4 مختلف پروگرامز بھی سرگرم عمل ہیں۔ رپورٹ کے مطابق 10 سوشل سیکٹر کے ادارے بھی صارفین کو مائیکرو فنانس کی مخصوص خدمات کی فراہمی کا کام کررہے ہیں۔

مزید : کامرس /رائے