شریف فیملی کیخلاف اراضی قبضہ کیس، وکلاء جرح کیلئے طلب

 شریف فیملی کیخلاف اراضی قبضہ کیس، وکلاء جرح کیلئے طلب

  

لاہور(نامہ نگار)سول جج سید جہانزیب بخاری نے شریف فیملی کے خلاف چار ہزار کنال اراضی قبضہ کیس کی سماعت 18مارچ تک ملتوی کرتے ہوئے وکلاء کو جرح کیلئے طلب کرلیا   عدالت میں شریف فیملی کے خلاف جاتی امراء میں چار ہزار کنال اراضی غیر قانونی قبضہ کیس کی سماعت شروع ہوئی تودرخواست گزار کی جانب سے پراپرٹی کے متعلق مزید ثبوت پیش کئے گئے،پنجاب یونیورسٹی کے سابق پروفیسر ڈاکٹر عبدالرؤف کی جانب سے قبضہ اراضی کا دعویٰ دائر کیا گیا ہے،جس میں کہا گیاہے کہ شریف فیملی نے جاتی امرا میں ہمارے آباؤ اجداد کی طرف سے ملنے والی چار ہزار ایکٹر زمین پر غیر قانونی طور پر قبضہ کیا، ہمارے اباؤ اجداد نے 1911 ء سے 12 میں اس وقت کی راجھ باہ گورنمنٹ سے اراضی خریدی تھی، زمین کا اصل مالک پیر بخش ابھی زندہ ہے جس کے آباؤ اجداد نے زمین خریدی عدالت سے استدعاہے کہ زمینوں کو اصل مالکان کے حوالے کرنے کا حکم دیاجائے۔

مزید :

علاقائی -