رحیم یار خان: شوگرملز کا ایکااڑ ھائی کروڑ بیگ چینی گوداموں میں سٹاک کر نیکا انکشاف: سیزن کمانے کی تیاریاں 

رحیم یار خان: شوگرملز کا ایکااڑ ھائی کروڑ بیگ چینی گوداموں میں سٹاک کر نیکا ...

  

رحیم یار خان (بیورو رپورٹ) شوگر کرشنگ سیزن اختتام پذیر ہو گیاسرکاری رپورٹس کے مطابق رحیم یار خان کی پانچوں شوگر ملز کے پاس اڑھائی کروڑ بوری چینی پڑی ہے جو پنجاب بھر کی شوگر ملز کی کرشنگ کا 65فیصد سے زائد ہے۔شوگر ملز نے 60فیصد گنا مقررہ نرخ 200روپے فی من خرید کیاباقی 10فیصد گنا اگلی فصل کے بیج کے لیے چھوڑ کر 30فیصد گنا سندھ کی شوگر کے ساتھ زیادہ سے زیادہ خریداری کے رجحان میں (بقیہ نمبر13صفحہ 6پر)

 250سے 320روپے تک خرید کیا اس لحاظ سے شوگر ملز کو پورے کرشنگ سیزن میں اوسط خریداری 240روپے میں پڑی جبکہ اوسط ریکوری 10سے11فیصد رہی اس لحاظ سے چینی کا فی کلو نرخ 68روپے بنتا ہے لیکن مارکیٹ 100 کلو چینی کی بوری کرشنگ سیزن کے آغاز اب تک 2400روپے اضافے سے 9400سو روپے کی ہو چکی ہے۔ مزیداضافہ جاری ہے۔کاشت کار تنظیموں کے مطابق کاشت کار تو شوگر ملز کے ہاتھوں لٹ گئے اب 22کروڑ عوام کو مہنگی چینی سے بچایا جائے کاشت کار تنظیموں کے مطابق اب تک فی کلو چینی 24روپے فی کلو مہنگی ہو چکی دوسری طرف مہنگی کھادوں‘ پیسٹی سائیڈز بجلی ڈیزل کے 100فیصد تک بڑھنے سے فصلوں کی دیکھ بھال مشکل ہو گئی ہے انہوں نے وزیراعظم پاکستان وزیر اعلی پنجاب سے مطالبہ کیا کہ زرعی اجناس کے نرخ فصل پر آٹھنے والے اخراجات کے لحاظ سے مقرر کئے جائیں۔ جبکہ رمضان المبارک کے دوران ریٹس مزید بڑھ سکتے ہیں۔

عوامی حلقے

مزید :

ملتان صفحہ آخر -