کسی بھی معاشرے کا انحصار انصاف پر ہے،عبدالقدیر اعوان

کسی بھی معاشرے کا انحصار انصاف پر ہے،عبدالقدیر اعوان

  

پشاور(سٹی رپورٹر) تنظیم الاخوان پاکستان نے کہا ہے کہ کسی بھی معاشرے کا انحصار انصاف پر ہے کیونکہ انسانی معاشرے کا توازن عدل سے قائم ہے اورعدل انسانی معاشرے کی بنیاد ہے جب ہم یہاں خرابی کریں گے تو اس سے سار ا معاشرہ خراب ہوگا اور یہی بے انصافی فساد کا سبب بنے گی  کسی چیز کا عین اُس کے مقام پر ہونا انصاف کہلاتا ہے اورکسی بھی چیز کو اس کے مقام سے ہٹا دینا بے انصافی ہوتی ہے ان خیالات کا اظہا ر  امیر عبدالقدیر اعوان نے گزشتہ روز دو روزہ ماہانہ روحانی اجتماع  سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ جزا و سزا کا یقین ہی بندے کو جرم کرنے سے روکتا ہے  جزا و سزا معاشرے میں بڑی بنیاد ی حیثیت رکھتی ہے اگر معاشرے سے جزاو سزا کا تصور ختم ہو جائے تو پھر آپ اندازہ کر سکتے ہیں کہ اُس معاشرے کی حالت کیسی ہوگی انہوں نے کہا کہ ریاست مدینہ کی جب بات آتی ہے تو آپ ﷺ کے نافذ کردہ قوانین میں عدل ہر ایک کے لیے تھا اور مساوات کے ساتھ تھا،آپ ﷺ نے فرمایا کہ اگر میری بیٹی بھی چوری میں پائی جائے گی تو اس کا بھی ہاتھ کاٹا جائے گا انہوں نے کہا کہ سچ بولنا مومن کی نشانی ہے۔یہ نہیں ہونا چاہیے کہ فلاں جگہ سچ بولنے سے 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -