نااہلی کیس، یوسف رضاگیلانی کا نوٹیفکیشن فوری روکنے کی استدعا مسترد،پی ٹی آئی کی درخواست میں ترمیم کی ہدایت

نااہلی کیس، یوسف رضاگیلانی کا نوٹیفکیشن فوری روکنے کی استدعا مسترد،پی ٹی ...
نااہلی کیس، یوسف رضاگیلانی کا نوٹیفکیشن فوری روکنے کی استدعا مسترد،پی ٹی آئی کی درخواست میں ترمیم کی ہدایت

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)الیکشن کمیشن نے نااہلی کیس میں یوسف رضا گیلانی کی کامیابی کا نوٹیفکیشن فوری روکنے کی استدعا مسترد کردی اورپی ٹی آئی کودرخواست میں ترمیم کرنے کی ہدایت کردی،رکن الیکشن کمیشن نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ ہرشخص اپنے کام کاذمہ دار ہے،ویڈیومیں جس کانوٹیفکیشن رکواناہے اس کاذکر نہیں۔

نجی ٹی وی دنیانیوز کے مطابق الیکشن کمیشن میں اسلام آباد سے منتخب ہونے والے سینیٹر یوسف رضاگیلانی کی نااہلی کیس کی سماعت ہوئی،رکن پنجاب کی سربراہی میں 4 رکنی کمیشن نے سماعت کی ،پی ٹی آئی کے علی ظفر،فرخ حبیب،کنول شوزب الیکشن کمیشن پیش ہوئے،چیف الیکشن کمشنرمصروفیت کی وجہ سے سماعت میں شریک نہیں ہوئے۔

پی ٹی آئی کے وکیل بیرسٹر علی ظفر نے دلائل دیتے ہوئے کہاکہ نمبرگیم میں پی ٹی آئی امیدوارحفیظ شیخ کواکثریت حاصل تھی،سینیٹ انتخاب میں پیسے اورپارٹی ٹکٹس کے عوض دھاندلی کی گئی،بیرسٹر علی ظفر نے کہاکہ سینیٹ الیکشن سے ایک روزپہلے دھاندلی کاثبوت ملا،علی حیدرگیلانی ویڈیومیں ووٹ خراب کرنے کاکہہ رہے تھے۔

ممبر الیکشن کمیشن نے کہاکہ پی ٹی آئی کے وکیل نے ویڈیوکاٹرانسکرپٹ دیا،بیرسٹر علی ظفر نے کہاکہ الیکشن کمیشن کے پاس سیکشن 9 کے تحت اختیارات ہیں،ممبرپنجاب نے کہاکہ جن لوگوں کویہ رقم آفرکی گئی انہیں فریق نہیں بناناچاہئے تھا؟،بیرسٹر علی ظفر نے کہاکہ فریق نہیں،وہ گواہ ہوسکتے ہیں،ویڈیومیں موجودلوگوں کے کم ازکم بیان حلفی لیے جاتے،جن کوآفرہوئی ان کے بیان حلفی لیے جاتے،

رکن الیکشن کمیشن پنجاب نے کہاکہ آج اسی طرح کے کیس میں فیصلہ دے چکے ہیں،تائیدی شہادت لازمی ہونی چاہئے،رشوت دینے اور لینے والادونوں مرتکب ہیں۔

دوران سماعت علی حیدرگیلانی کی ویڈیوچلائی گئی ،بیرسٹرعلی ظفر نے کہاکہ الیکشن کمیشن نے ویڈیوسامنے آنے پرنوٹس بھی لیا،الیکشن کمیشن نے نوٹس لینے پرپریس ریلیزبھی جاری کی،رکن الیکشن کمیشن پنجاب نے کہاکہ ہم نے کوئی نوٹس نہیں لیاتھا،اس ویڈیومیں پیسے اورٹکٹ کاکوئی ذکرنہیں،پی ٹی آئی وکیل نے کہاکہ علی حیدرگیلانی ایم این ایزکوطریقہ بتارہے ہیں،علی حیدرگیلانی نے خودتسلیم کیایہ ویڈیودرست ہے۔

رکن پنجاب نے کہاکہ ویڈیوکے معاملے پرالیکشن کمیشن نے کوئی نوٹس نہیں لیا،میڈیاپرکہاگیاکہ دہرا معیارہے،ڈی جی لاسے پوچھاتوانہوں نے کہانوٹس نہیں لیا،ممبرپنجاب نے کہاکہ ایم پی اے عبدالسلام کوخط لکھاکہ ویجلینس کمیٹی سے رجوع کریں،رکن الیکشن کمیشن نے کہاکہ ایسی باتوں سے گریزکرناچاہیے، ممبرپنجاب نے کہاکہ ان ویڈیوزمیں کون ہیں ان کے نام بتائیں اورانہیں فریق بنائیں،کوئی شہادت دیں پھرہی کارروائی ہوسکتی ہے،الیکشن کمیشن نوٹیفکیشن جاری ہونے کے بعدنااہل بھی کرسکتاہے، جذبات سے نہیں،قانون پربات کریں۔

رکن الیکشن کمیشن نے کہاکہ ہرشخص اپنے کام کاذمہ دار ہے،ویڈیومیں جس کانوٹیفکیشن رکواناہے اس کاذکر نہیں،آپ کی پٹیشن اوتھ کمشنرسے تصدیق شدہ نہیں،وکیل پی ٹی آئی نے کہاکہ کرپشن پکڑنے کیلئے ایسی چیزیں ضروری ہیں، الیکشن کمیشن نے یہی اختیارات این اے 75 ڈسکہ میں استعمال کیے،الیکشن کمیشن کرپٹ پریکٹسزروکنے کیلئے اختیارات استعمال کرسکتا ہے،وکیل پی ٹی آئی نے کہاکہ ویڈیومیں 5 سے 6 کروڑروپے کی پیشکش کی گئی،ویڈیوزسامنے آنے پرالیکشن کمیشن سے رجوع کیالیکن نوٹس نہیں ہوا، سینیٹ انتخابات میں اسی امیدوارنے اسی پیٹرن پر 12 ووٹ زیادہ لیے۔

رکن کمیشن پنجاب الطاف قریشی نے کہاکہ پی ٹی آئی ان 12 بندوں کے نام ثبوتوں کے ساتھ دیں تو ہم انکے خلاف کاروائی کرینگے، ہم ٹاک شو کی ویڈیوز نہیں سنیں گے، پہلے بھی سینٹ الیکشن 2018 میں شکایات داخل کرا کے کوئی بھی ثبوت نہیں دیا گیا۔بیرسٹر علی ظفر نے کہاکہ پی ٹی آئی کے 12 باغی اراکین اسمبلی کے نام کل تک الیکشن کمیشن میں جمع کرا دینگے۔

الیکشن کمیشن نے یوسف رضا گیلانی نااہلی کیس میں پی ٹی آئی کودرخواست میں ترمیم کرنے کی ہدایت کردی،وکیل پی ٹی آئی نے کہاکہ کل ترمیم شدہ درخواست میں ویڈیومیں موجودلوگوں کوفریق بناتاہوں،بیرسٹر علی ظفر نے کہاکہ کل بیان حلفی اوردلائل دوں گا، الیکشن کمیشن نے سماعت کل تک ملتوی کردی۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -علاقائی -اسلام آباد -