پاک ڈینش تعلقات کا سفر بہتری کی جانب گامزن

پاک ڈینش تعلقات کا سفر بہتری کی جانب گامزن

کوپن ہیگن( آئی این پی) پاک ڈینش تعلقات کا سفر بہتری کی جانب گامزن ، NSWC کا ڈنمارک کا پہلا دورہ۔گزشتہ کئی برسوں سے پاک ڈینش باہمی تعلقات میںترقیاتی شعبوں میں تعاون، انسانی بنیادوں پر امداد ، استحکام کی کوششوں اور تجارت کی وجہ سے کافی اضافہ ہوا ہے۔ ڈنمارک نے پاکستان سے تعاون میںمزید اضافہ کر دیا ہے ۔اگرچہ ڈینش آرمڈ فورسز اور نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی کے مابین محققین کے تبادلوں کی صورت میں بہترین تعلقات کئی سالوں سے استوار ہیں،لیکن نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی کے انتہائی اہم© نیشنل سٹریٹیجی اینڈ وار کورس ‘ نے پہلی بارڈنمارک کا دورکیا۔یہ دورہ نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی کے سالانہ بیرون ملک مطالعاتی دورے کا حصہ تھا۔ ڈنمارک سفارت خانے کے دفاعی اتاشی کرنل سٹین بی اینڈرسن ،جواس تاریخی دورہ کا حصہ تھے ، نے خطاب میںکہا کہ”ےہ ڈنمارک کے لئے ایک نہایت اہم موقع ہے کہ وہ اپنے ملک کو پاکستان آرمڈ فورسز کے مستقبل کے اعلی سطح کے کمانڈرزکے سامنے لا سکے ہیں“۔ اگرچہ اس دورے کا اہم مقصد ملٹری کے اہم پہلوو¿ںمیں تبادلہ خیال تھا تاہم ڈینش ڈیموکریسی، ڈینش فارن اینڈ ڈیفنس پالیسیوں سے متعلق بریفنگ بھی پروگرام کا حصہ تھی۔اس دورہ میں ڈنمارک میںدنیا کی سب سے بڑی شپنگ کمپنی ’Maersk‘ اور ویسٹ مینجمنٹ سسٹم اور اس ویسٹ سے کم خرچ میں بجلی کی پیداواری منصوبوں جیسے اہم کاروباری رجحانات کو بھی پاکستانی وفد کے سامنے رکھا گیا۔رائل ڈینش ڈیفنس کالج کے محقیقن اور نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی کے طلباءکے درمیانNATO ، افریقی تنازعات اور ڈنمارک کے تناظر میںافغانستان کی صورتحال جیسے اہم معاملات پر بریفنگ اور خیالات کا تبادلہ بھی اس دورہ کا حصہ تھا جس کا اختتام خوشگوار ماحول کے ساتھ ہوا۔ یہ دورہ ڈینش حکومت کی جانب سے حکومتِ پاکستان کے ساتھ پاکستان میں استحکام اور ملٹری تعاون کے شعبوں میںپارٹنرشپ پروگرام کا حصہ ہے۔

مزید : عالمی منظر