5سالہ صنعتی پالیسی کا اعلان جلد ہو گا ،ایک ہزار مزید یوٹیلیٹی سٹور کھولیں گے ،غلام مرتضی جتوئی

5سالہ صنعتی پالیسی کا اعلان جلد ہو گا ،ایک ہزار مزید یوٹیلیٹی سٹور کھولیں گے ...

                                                      اسلام آباد(کامرس ڈیسک)وفاقی وزیر صنعت غلام مرتضیٰ خان جتوئی نے کہا ہے کہ حکومت صنعتی پالیسی کو حتمی شکل دے رہی ہے جسکا اعلان سال رواں میں کر دیا جائے گا۔ یہ پالیسی پانچ سال کے لئے ہو گی اور صنعتی برادری کے توقعات کے مطابق ہو گی جس سے ملکی ترقی کی راہیں کھلیں گی۔انھوں نے کہا کہ پاکستان سٹیل ملز کے لئے اٹھارہ ارب کا بیل آﺅٹ پیکج منظور کر لیا گیا ہے جس سے چھ ماہ میں پیداوار میں ستر فیصد اضافہ متوقع ہے۔غلام مرتضیٰ خان جتوئی نے یہ بات ایف پی سی سی آئی میں کاروباری برادری سے بات چیت کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر وفاقی چیمبر کے قائم مقام صدر شوکت احمد اور دیگر بھی موجود تھے۔انھوں نے کہا کہ قطر سے ایل این جی کی درامد دس ماہ کے اندر شروع ہو جائے گی جبکہ توانائی کا بحران چار سال میں حل ہو جائے گا جس سے ملکی ترقی کی نئی راہیں کھلینگی۔حکومت ایک ہزار نئے یوٹیلیٹی سٹور کھولنے کا ارادہ رکھتی ہے جس میں سے ڈھائی سو صوبہ سندھ میں قائم کئے جائینگے۔ ہم ملکی ترقی کو یقینی بنانے کیلئے برامدات کو ساٹھ ارب ڈالر تک بڑھانا چاہتے ہیں جسکے لئے پروسی ممالک سے تجارت اور صنعتی انقلاب ضروری ہے۔وفاقی وزیر نے کہا کہ حکومت بیمار صنعتوں کی بحالی کیلئے ایف پی سی سی آئی سے مل کر کام کرنے کو تیار ہے۔ اس موقع پر ایف پی سی سی آئی کے قائم مقام صدر شوکت احمد نے کہا کہ صنعتی شعبہ کا حصہ مجموعی قومی پیداوار میں 20.96فیصد ہے جس سے کروڑوں افراد کو روزگار بھی ملتا ہے مگر اسے امن و امان، غیر مربوط پالیسیوں، کمزور بنیادی ڈھانچے اور پانی و توانائی کی کمی کا سامنا ہے۔ انھوں نے کہا کہ ایکسپورٹ پراسسنگ رونز کی حالت خراب ہے پورٹ قاسم میں پولیس کی گشت نہ ہونے کے سبب جرائم پیشہ اور اغوا کار نڈر ہو گئے ہیں۔صنعتی فضلے کو ٹھکانے لگانے کا مناسب انتظام نہیں جسکی وجہ سے پینے اور زراعت کیلئے استعمال ہونے والا پانی آلودہ ہو رہا ہے۔پورٹ قاسم کے اندر اور قرب و جوار میں ماحولیاتی آلودگی پر قابو پانے کے لئے اقدامت کئے جائیں۔

مزید : کامرس