قطر نے ورلڈکپ کی میزبانی رشوت دے کر حا صل کی

قطر نے ورلڈکپ کی میزبانی رشوت دے کر حا صل کی
قطر نے ورلڈکپ کی میزبانی رشوت دے کر حا صل کی

  

پیرس (بیورورپورٹ) رشوت اور سفارش لا دور دورپ صرف وطن عزیز پاکستان میں ہی نہیں ہے بلکہ دنیا کے بڑے بڑے ترقی یافتہ ممالک جو کہ خود کو اخلاقی اقدار کا سرچشمہ سمجھتے ہیں، بھی اس لعنت سے محفوظ نہیں ہیں۔ جب فٹ بال کی عالمی تنظیم ”فیفا“ نے فٹ بال کا اگلا عالمی ٹورنامنٹ قطر میں منعقد کرنے کا فیصلہ کیا تو بہت سے دیگر ممالک جو اس ٹورنامنٹ کو اپنے ہاں منعقد کروانا چاہتے تھے، نے طرح طرح کے اعتراضات کئے لیکن اب اس فیصلے کے پس پردہ رازوں سے پردہ اٹھ رہا ہے۔ فیفا کمیٹی کے بیلجئم سے رکن مشیل ڈاہوگ کے بیٹے پیٹر ڈاہوگ کو قطر کے حق میں فیصلہ ہونے کے فوری برد قطر کے ایک اعلیٰ درجے کے ہسپتال میں نوکری ملنے کا انکشاف ہوا ہے۔ اسی طرح فرانس سے تعلق رکھنے والے فیفا کمیٹی کے رکن مشیل پلاٹینی کے بیٹے لارنٹ کو بھی ایک بڑی قطری سپورٹس کمپنی برڈا کا سربراہ بنایا گیا ہے۔ بہت سے ممالک نے پہلے ہی اس خدشہ کا اظہار کیا تھا کہ فیصلہ کرنے والے اراکین اور قطر کے درمیان کوئی ساز باز چل رہی ہے اور بار بار اس فیصلے پر نظر ثانی کا مطالبہ کیا جارہا ہے۔

مزید : کھیل