مشتاق رئیسانی نے کرپشن کا اعتراف کر لیا ، پردہ نشینوں کے نام بھی اگل دیئے

مشتاق رئیسانی نے کرپشن کا اعتراف کر لیا ، پردہ نشینوں کے نام بھی اگل دیئے

 کوئٹہ(اے این این) کوئٹہ میں گرفتار ہونے والے سابق سیکرٹری خزانہ مشتاق رئیسانی نے کرپشن کا اعتراف کر لیا، مدد کرنے والے سرکاری افسران سمیت کئی پردہ نشینوں کے نام بھی اگل دئیے، سابق سیکرٹری خزانہ کے انکشافات کے بعد تحقیقات کا دائرہ وسیع کر دیا گیا مزید گرفتاریوں کا امکان،کوئٹہ اورمچھ کے بینکوں سے ٹرانزیکشن کامتعلقہ ریکارڈحاصل کرلیاگیا،چھان بین جاری ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق سابق سیکریٹری خزانہ بلوچستان نے کرپشن کا اعتراف کرلیا، مشتاق رئیسانی نے دوران تفتیش بتایا کہ گھر سے ملنے والے 65کروڑ روپے قومی خزانے سے لوٹے گئے۔ مشتاق رئیسانی نے کرپشن میں ملوث اورمدد کرنیوالے چند افسروں اور دیگر پردہ نشینوں کے نام بھی بتا دئیے ہیں ۔سابق سیکرٹری خزانہ کی نشاندہی پر مزید گرفتاریوں کا امکان ہے یہ گرفتاریاں نیب اور قانون نافذ کرنے والے دیگر اداروں کی جانب سے کی جائیں گی۔ رئیسانی کی گرفتاری اور اعترافات کے بعد اس کیس میں مزید تحقیقات کادائرہ وسیع کردیاگیاہے۔ نیب بلوچستان کے ذرائع کے مطابق نیب نے کرپشن سکینڈل میں ملوث مزید سہولت کارملزمان کی تلاش بھی شروع کردی ہے۔ نیب ذرائع کے مطابق اس حوالے سے سہولت کاروں کی تلاش اورگرفتاری کیلئے کارروائی جاری ہے،ان میں محکمہ لوکل گورنمنٹ کے اہلکارشامل ہیں۔آ ئندہ ہفتے کے دوران چند مزید اہم گرفتاریاں متوقع ہیں۔ نجی ٹی وی کے مطابق مشتاق رئیسانی نے دوران تفتیش کرپشن میں معاونت کرنے والے چند سیاستدانوں اور بیورو کریٹس کے نام بھی بتائے ہیں جن پر ہاتھ ڈالنے کی تیاریاں کی جا رہی ہیں۔

مزید : صفحہ اول