یوتھ کمیشن فار ہیومن رائٹس کے زیر اہتمام ہوم سکول پراجیکٹ کی افتتاحی تقریب‘ خواتین کی خصوصی تربیت‘15ہوم سکول کھولنے کا ارادہ

یوتھ کمیشن فار ہیومن رائٹس کے زیر اہتمام ہوم سکول پراجیکٹ کی افتتاحی تقریب‘ ...

ملتان(سٹاف رپورٹر)یوتھ کمیشن فار ہیومن رائٹس کے زیر اہتمام مقامی ہوٹل میں ہوم سکول پراجیکٹ کی افتتاحی تقریب منعقد کی (بقیہ نمبر12صفحہ12پر )

گئی ۔جس کا مقصد بتانا تھا کہ وائے سی ایچ آر تحصیل مظفر گڑھ اور تحصیل کوٹ ادو کے پسماندہ ترین علاقوں میں سمال گرانٹ ایمبسڈرفنڈز پروگرام کے تحت 15ہوم سکول کھولنے کا ارادہ رکھتی ہے ۔ہوم سکول ایجوکیشن پراجیکٹ کے تحت مقامی تعلیم یافتہ خواتین کو غیر رسمی سکول چلانے کی خصوصی تربیت بھی دی گئی ہے جوکہ اپنے گھروں میں سکول کھولیں گی اور علاقے کے ان بچوں کو جو کہ کسی بھی وجہ سے سکول نہیں جاسکتے‘ اپنے سکول میں رجسٹرڈ کر کے تعلیم کے زیور سے روشناس کروائیں گی۔ YCHRکی پراجیکٹ کوآرڈینیٹر وجاہت بتول نے بتایا کہ YCHRکے ابتدائی سروے کے مطابق تحصیل مظفر گڑھ کی بستی جھنگڑماہرہ میں93.4،بستی کنڈے والا 80 فیصد، بستی مونڈا اور بستی عثمان آباد کے70فیصد بچے سکول نہیں جاتے ۔اسی طرح تحصیل کوٹ ادوکی بستی رانجھے خاں والی میں 80فیصد اور بستی نواں کھوہ میں 70فیصد بچے سکول نہیں جاتے۔ہوم سکول پراجیکٹ کی افتتاحی تقریب میں مہمان خصوصی ممبر صوبائی اسمبلی ذیشان گورمانی نے شرکت کی اور تقریب سے خطاب کرتے ہوئے YCHR کو مظفر گڑھ کے پسماندہ علاقوں میں پراجیکٹ شروع کرنے پر مبارکباد دی اور کہا کہ مظفر گڑھ پنجاب کے تمام اضلاع میں سے محروم ترین ضلع ہے کیونکہ1998کی مردم شماری رپورٹ کے مطابق یہاں خواندگی کی شرح28-5 فیصد ہے ،اس پراجیکٹ کی افتتاحی تقریب میں انہوں نے پراجیکٹ کی کامیابی کے حوالے سے ہر سطح پر اپنے تعاون کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ ہوم سکول پرا جیکٹ پسماندہ علاقوں میں کسی نعمت سے کم نہیں۔ تقریب میں وائس چیئرمین یونین کونسل ڈوگر کلاسرہ محبوب خان مشوری، مظہر اقبال جگلانی، اعجاز خان گورمانی ایڈوکیٹ، صدر تحصیل بار ایسوسی ایشن کوٹ ادوجاوید خان مشوری، چوہدری یاسر اقبال،امتیاز خان مشوری نے بھی خطاب کیا اور پرا جیکٹ کے حوالے سے نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے اپنے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔ اس موقع پر لیٹریسی کوآرڈینیٹر مشتاق چشتی بھی موجود تھے جبکہ سٹیج سیکرٹری کے فرائض معروف سرائیکی شاعر نواب مضطرنے سرانجام دیئے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر