جھگڑوں سے دلبرداشتہ 2 خواتین کا اقدام خودسوزی ‘ شوہروں نے آگ لگائی ‘ ذرائع

جھگڑوں سے دلبرداشتہ 2 خواتین کا اقدام خودسوزی ‘ شوہروں نے آگ لگائی ‘ ذرائع

چوک سرور شہید ‘ میر ہزار خان ( نمائندگان ) لڑائی جھگڑوں سے دلبرداشتہ   2خواتین نے پٹرول چھڑک کر خود کو آگ لگا لی ‘ شوہروں آگ لگائی ‘ ذرائع ۔ اس سلسلے میں چوک سرور شہید سے سپیشل رپورٹر کے مطابق چوک سرورشہید کے نواحی گاؤں چک نمبر560/TDA کے رہائشی محمد عمرولدبشیر احمد جس کی شادی تقریباً سات سال قبل اپنی خالہ زاد صائمہ بی بی سے جھنگ میں شادی ہوئی۔ اور انکے چار بچے جن میں دو بیٹیا ں اور دو بیٹے تھے۔ صائمہ حافظ قرآن اور اسی گاؤں کے ایک پرائیویٹ سکول میں ٹیچنگ کرتی تھی۔ گزشتہ سے پیوستہ شب اس کی اپنے خاوند محمد عمر سے گھر میں کسی بات پر لڑائی ہوئی۔ جس مبینہ طور پ غصہ میں آکر صائمہ نے گھر میں موجود پڑول خود پر چھڑک کر خود کو آگ لگا لی۔جس سے اس کا جسم بری طرح جھلس گیا۔خاتون صائمہ کی عمر 30 بتائی جاتی ہے۔ جسے اس کا شوہر محمد عمر اور دیور محمد یونس فوری طورپر پرائیویٹ کلینک پر ڈاکٹر نصرت رحمان کے پاس لیکر آئے جس نے انہیں فوری طورپر نشتر ہسپتال ملتان لیجانے کا مشورہ دیا۔ پولیس بھی ہسپتال پہنچی لیکن صائمہ کے شوہر محمد عمر نے کہا کہ قانونی کارروائی نہیں کروانا چاہتے اور اپنی بیوی کو لیکر نشتر ہسپتا ل ملتان کے برن یونٹ میں داخل کرادیا گیا۔جہاں اس کی حالت انتہائی تشویشناک بیان کی جاتی ہے۔ خاتون کے چار بچوں میں سب سے بڑی بیٹی کی عمر چھے سال ہے۔ میر ہزار خان سے نمائندہ پاکستان کے مطابق میرہزار خاں کے محمد موسیٰ کلو نے اپنی بیٹی شاہین بی بی کی شادی اپنی برادری کے کریم بخش کلو ولدنور محمد سے کردی تھی اور ان کے تین بیٹے ہیں کچھ عرصہ سے کریم بخش اپنی بیوی شاہین بی بی سے دوسری شادی کی اجازت مانگ رہا تھا ‘ نہ دینے پر میاں بیوی میں جھگڑا رہنے لگا‘ گزشتہ روز گھر پر کوئی نہ تھا کہ کریم بخش کلو نے موٹر سائیکل سے پٹرول نکال کر بیوی پر چھڑک کر آگ لگادی جس سے وہ بری طرح جھلس گئی اسے تشویشناک حالت کے پیش نظر تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال جتوئی لایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے فوری طور پر طبی امداد دیکر نشتر ہسپتال ملتان ریفر کردیا جہاں اسکی حالت انتہائی تشویشناک بیان کی جاتی ہے ۔ میر ہزار خان سے نامہ نگار کے مطابق میرہزار خان (نامہ نگار ) شاہین بی بی گزشتہ روز گھر میں اکیلی تھی ‘ موٹر سائیکل سے پٹرول نکال کر اپنے اوپر چھڑک کر آگ لگا دی ۔جس پر گھر والوں کو خبر ہوئی تو اسے فورا تھانہ میرہزار لے گئے جہا ں اس نے دوسری شادی کی رنجش پر خود کشی کا بیان ریکارڈ کرایا ۔پھر اسے ہسپتال لے جایا گیا جہاں سے اسے ملتان بھیج دیا گیا ۔شاہین بی بی کا جسم چالیس فیصد جھلس چکا ہے ۔شاہین بی بی کے تین بیٹے بھی ہیں ۔تاہم پولیس نے تفتیش شروع کر دی ۔اور ڈی ایس پی علی پر ریاض حسین بخاری بھی موقع پر پہنچ گئے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر