حکومت امن وامان کے قیام میں ناکام ہوچکی ہے،علامہ ناصرعباس

حکومت امن وامان کے قیام میں ناکام ہوچکی ہے،علامہ ناصرعباس

اسلام آباد( سٹاف رپورٹر) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے دہشت گردی کے واقعہ میں سول سوسائٹی کے رہنما اور ممتاز صحافی خرم ذکی کے قتل پر شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے اسے کالعدم مذہبی جماعتوں کی کاروائی قرار دیا ہے. شہید خرم ذکی کے جلوس جنازہ میں شرکت کے دوران انہوں نے میڈیا سے بات کرتے ھوئے کہا کہ خرم ذکی کو ملک دشمن گروہ کے خلاف آواز بلند کرنے کی سزادی گی ہے.خرم ذکی ایک نڈر اور سچائی پسند محب وطن پاکستانی تھے. انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کے بڑھتے ہوئے واقعات قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہیں. حکومت امن وامان کے قیام اور عوام کو تحفظ کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے.اس سے قبل گزشتہ ماہ کراچی میں جمعہ نماز کی ادائیگی کے بعد گھر جانے والے جامعہ کراچی کے گولڈ میڈلسٹ ہاشم رضوی کو بھی سفاک دہشتگردوں کی جانب سے ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنایا گیا تھا جس کے قاتل تاحال نہیں پکڑے گئے. علامہ ناصر عباس جعفری نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ خرم ذکی کے قاتلوں کو فی الفور گرفتار کر کے قرار واقعی سزا دی جائے. انہوں نے صحافی برادری اور سول سوسائٹی کے اراکین سے بھی مطالبہ کیا کہ وہ اس مظلومانہ شہادت کے مرتکب دہشت گردوں کے خلاف ہر پلیٹ فارم پر آواز بلند کریں۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان میں ایک بار بھی پشاور، ڈیرہ اسماعیل خاں اور کراچی میں شیعہ پروفیشنلز وکلاء ، اساتذہ اور صحافیوں کا سلسلہ وار قتل پاکستان میں سعودی عمل دخل اور دہشتگردوں کی معاونت کا ثبوت ھے۔یہ بیرونی مداخلت ملک کو فرقہ واریت کی آگے میں جھونکنے کی کوشش ہے۔انتہا پسند عناصر شیعہ پروفیشنلز کو مسلسل ٹارگٹ کا نشانہ بنا کر ضرب عضب اور نیشنل ایکشن پلان کو سرعام چیلنج کر رہے ہیں۔ٹارگٹ کلنگ کی پہ در پہ واردتوں یہ اس تاثر کو تقویت مل رہی ہے کہ قانون نافذ کرنے والے ادارے مذموم عناصر کے ناپاک ارادوں کے سامنے پسپا ئی اختیار کر چکے ہیں۔ہم پاکستان کے محب وطن شہری ہیں اور قانون و آئین کی پاسداری کو اپنا اولین فریضہ سمجھتے ہیں یہی آئین ریاست کو پابند بناتا ہے کہ وہ ہر شہری کی بلا امتیاز تحفط کو یقینی بنائے۔علامہ ناصر عباس نے کہا کہ ہے خرم ذکی کے قاتلوں کو فوری گرفتار کر کے کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔ایسے عناصر کو جب تک نشان عبرت نہیں بنایا جاتا تب تک ملک میں ایسا واقعات رونما ہوتے رہیں گے

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر