پانامہ لیکس کے حوالے سے وزیراعظم کے استعفے کا مطالبہ درست نہیں ، مولانا لطف الرحمان

پانامہ لیکس کے حوالے سے وزیراعظم کے استعفے کا مطالبہ درست نہیں ، مولانا لطف ...

ڈیرہ اسماعیل خان(بیورورپورٹ)خیبرپختونخواہ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈروضلعی امیرجے یوآئی مولانالطف الرحمن نے کہاہے کہ پانامہ لیکس کی انکوائری کے سلسلے میں اپوزیشن کی طرف سے وزیراعظم کے استعفے کامطالبہ غلط ہے۔خیبرپختونخواہ میں خیبربینک سکینڈل کے منظرعام آنے کے بعدپی ٹی آئی کی حکومت چیف جسٹس کی سربراہی میں فوراًانکوائری کاحکم دیتی کیونکہ خیبربینک کاایم ڈی چارج شیٹ کررہاہے۔خیبرپختونخواہ حکومت کے ترقیاتی فنڈزغلط منصوبہ بندی کی وجہ سے دوبارہ لیپس ہورہے ہیں۔جون میں عوام کوترقیاتی فنڈزکے حوالے سے اعدادوشماردینگے۔صوبے میں ٹارگٹ کلنگ‘بھتہ خوری اوراغواء برائے تاوان عروج پرہے۔ڈیرہ اسماعیل خان میں ٹارگٹ کلنگ کے حوالے سے ہم مذمت کرتے ہیں اورمطالبہ کرتے ہیں کہ جومعاہدات ماضی میں ڈیرہ اسماعیل خان کے امن کیلئے کئے گئے اس پر عملدرآمدکیوں نہیں ہورہا۔یہ انتظامیہ کاکام ہے۔ان خیالات کااظہارانہوں نے اپنی رہائشگاہ شورکوٹ میں معززین علاقہ‘جے یوآئی کے قائدین اورمنتخب نمائندوں سمیت میڈیاکے نمائندوں سے گفتگو کے دوران کیا۔اس موقع پرضلعی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈرمولاناعبیدالرحمن‘حاجی عبداللہ‘ممبرضلع کونسل ملک مشتاق احمدڈار‘سابق ناظم مریالی ملک اکرام ایسر‘سابق ایم پی اے طاہربنیامین اورقاری اشرف علی بھی موجودتھے۔مولانالطف الرحمن نے کہاکہ وزیرمال خیبرپختونخواہ کی طرف سے چیف جسٹس پشاورہائیکورٹ کیخلاف لگائے گئے الزامات حیران کن ہیں۔ہائیکورٹ خوداس بارے نوٹس لے۔انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی کی تبدیلی صرف ہماری تہذیب کی تبدیلی ہے۔پی ٹی آئی مشرقی تہذیب کی جگہ مغربی تہذیب لاناچاہتی ہے۔ہم کسی صورت اسلام کوکمزورنہیں ہونے دینگے۔یہ انکی بھول ہے۔بلدیاتی نظام میں نقائص موجودہیں انکومشاورت اورحکمت عملی سے دورکیاجاسکتاہے کیونکہ نیابلدیاتی نظام ہمارے گلے میں فٹ ہے۔انہوں نے کہاکہ ضلعی حکومت نے ترقیاتی بجٹ اجلت میں پاس کیاجس کاوہ خودخمیازہ بھگت رہے ہیں۔ہاؤس کے پاس پورااختیارہے کہ وہ ہاؤس کے اندرسے تبدیلی لاناچاہیں توتبدیلی لاسکتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ اقتصادی راہداری منصوبہ بہت بڑامنصوبہ ہے۔جسکاسنگ بنیادوزیراعظم میاں نوازشریف دورہ ڈیرہ اسماعیل خان کے دوران رکھیں گے۔اس سے تجارت فروغ پائے گی۔بیروزگاری ختم ہوگی۔یہ منصوبہ دوسال کاہے۔اس منصوبے پر ایک کھرب پچیس ارب روپے خرچ ہونگے۔انہوں نے کہاکہ جولوگ غلط افواہیں پھیلارہے ہیںیہ ناسمجھ لوگ ہیں۔بنوں اےئرپورٹ کوانٹرنیشنل اےئرپورٹ بنانے سے کسی کوکوئی اعتراض نہیں ہونا چاہئے۔ڈیرہ اسماعیل خان میں بھی انٹرنیشنل اےئرپورٹ بنے گا۔انہوں نے کہاکہ سی آربی سی ٹونہرکے قیام سے ہماری لاکھوں ایکڑاراضی سیراب ہوگی اوریہ تین لفٹ کینالوں کی ضرورت کوپوراکریگی۔اس سے سبزانقلاب آئیگااورہم پورے صوبے کی اجناس کی ضرورت کوپوراکرینگے۔گیس کیلئے اسی کروڑروپے منظورہوچکے ہیں۔جسکی منظوری وزیراعظم دے چکے ہیں اسی طرح دوارب ساٹھ کروڑروپے کی لاگت سے لدومارجنل بندکااعلان کرینگے۔ڈیرہ اسماعیل خان اورٹانک کیلئے پیکجزکے اعلان کے علاوہ زرعی یونیورسٹی کے قیام کااعلان بھی کیاجائیگا۔سی آربی سی ٹونہرپرایک کھرب روپے لاگت آئیگی۔انہوں نے کہاکہ ریسکیو1122کے ڈیرہ اسماعیل خان میں قیام خوش آئندہے لیکن اس میں ضلع ڈیرہ کی عوام کوروزگارملناچاہئے تھا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر