ناروا اور ظالمانہ لوڈشیڈنگ کیخلاف نوشہرہ کے عوام سٹرکوں پر نکل آئے

ناروا اور ظالمانہ لوڈشیڈنگ کیخلاف نوشہرہ کے عوام سٹرکوں پر نکل آئے

نوشہرہ(بیورورپورٹ)آرمر کالونی مانکی روڈ، نوشہرہ کلاں اور نوشہرہ کینٹ کے عوام اور تاجروں کا محکمہ واپڈا کے ناروا لوڈشیڈنگ کے خلاف زبردست احتجاجی مظاہرے چیف پیسکو خیبرپختونخوا اور صوبائی حکومت کے درمیان پوری ریکوری دینے والے علاقوں میں لوڈشیڈنگ نہ کرنے کے معاہدے کو ایکسین نوشہرہ سرکل ون اور نوشہرہ سرکل ٹو کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ظالمانہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ تیز کردیا ہے عوام اور تاجروں نے محکمہ واپڈا پیسکو کی فوری طورپر نجکاری کی حمایت میں ریلیاں نکالنے کا اعلان کردیا ہے محکمہ واپڈا کو فوری طورپر نجکاری کردی جائے تاکہ چور اور کام چور واپڈا ملازمین سے جلد سے جلد چٹکارہ پایا جاسکے بجلی چوری کرنے والے افراد کی سرپرستی محکمہ واپڈا کے اہلکار خود کررہے ہیں اور ہرماہ محکمہ واپڈا کے اہلکار ہربجلی چور اور کھنڈا مافیا سے پانچ سو سے ایک ہزارروپے تک بھتہ وصول کرتے ہیں اور باقی بل ادائیگی کرنے والے شریف صارفین پرلائن لاسز پورا کرنے کی صورت میں غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کے بم گرائے جارہے ہیں تفصیلات کے مطابق آرمر کالونی مانکی روڈ، نوشہرہ کلاں اور نوشہرہ کینٹ کے معززین اور تاجروں جن میں سماجی وسیاسی شخصیت جاویداقبال، زاہد حیات گیلانی، دوست محمد، انیس الدین، انجمن تاجران ضلع نوشہرہ کے سدر آیاز پراچہ، میاں سہیل، استراج خان، افتخار خان، انجمن تاجران نوشہرہ کینٹ کے صدر خالدخان آفریدی، ارشد خان، سردار علی زرگر نے احتجاجی مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعلیٰ پرویز خان خٹک اور چیف پیسکو انوارالحق یوسفزئی کے درمیان ایک معاہدہ ہوا تھا جس میں کہا گیاتھا کہ جن علاقوں میں بلوں کی ریکوری 80سے 100فیصد تک ہوگی ان علاقوں میں مکمل طورپر لوڈشیڈنگ نہیں ہوگی اور 20فیصد سے کم ریکوری والے علاقوں میں لوڈشیڈنگ ہوگی لیکن ایکسین سرکل ون نوشہرہ اور ایکسین سرکل ٹو نوشہرہ نے معاہدے کے زبردست خلاف ورزی کرتے ہوئے بارہ سے اٹھارہ گھنٹوں تک ناروا لوڈشیڈنگ کا سلسلہ شروع کررکھا ہے جس سے کاروبار زندگی مکمل طورپر مفلوج ہوکر رہ گئی ہے مساجد اور گھروں میں پانی ناپید، رات کے وقت چوری کے وارداتوں میں زبردست اضافہ اور شدید گرمی کی وجہ سے بچے اور بوڑھے بیمار ہوکر ہسپتالوں میں پہنچ گئے ہیں انہوں نے کہا کہ محکمہ واپڈا نوشہرہ مختلف بہانوں اور طریقوں سے چار اور پانچ گھنٹے مسلسل غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کراتے ہیں شدید گرمی کی وجہ سے گھروں میں خواتین ، بچے اور بوڑھے بلبلا اٹھے جبکہ بازاروں میں غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کی وجہ سے کاروبار زندگی مفلوج ہوکررہ گی مساجد میں نمازیوں کیلئے پانی ناپید نمازیوں کا واپڈا ملازمین کیلئے بددعائیں جبکہ انجمن تاجران اور شہریوں نے غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ ختم نہ کرنے پر نوشہرہ بھر میں واپڈا کے دفاتر کے گھیراؤ کا اعلان کردیا ہے انہوں نے کہا کہ ہسپتالوں میں بجلی نہ ہونے کی وجہ سے مریض شدید مشکلات سے دوچارہے اور ہسپتالوں میں پڑے ہوئے کروڑوں روپے کے ادویات ضائع ہونے کا خدشہ ہے انہوں نے کہا کہ واپڈا افسران وفاقی اور صوبائی حکومتوں کوبدنام کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑتے ظالمانہ لوڈشیڈنگ خودکرتے ہیں جبکہ حکومت کو بدنام کرتے ہیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر