خواجہ آصف کے حلقے سے 30ہزار جعلی ووٹ نکلے ،جلد ہی ن لیگ کی چوتھی وکٹ بھی گر جائے گی :عمران خان

خواجہ آصف کے حلقے سے 30ہزار جعلی ووٹ نکلے ،جلد ہی ن لیگ کی چوتھی وکٹ بھی گر ...
خواجہ آصف کے حلقے سے 30ہزار جعلی ووٹ نکلے ،جلد ہی ن لیگ کی چوتھی وکٹ بھی گر جائے گی :عمران خان

  

پشاور (مانیٹرنگ ڈیسک )پاکستان تحریک انصاف کے چیئر مین عمران خان نے کہا ہے کہ خواجہ آصف کے حلقے سے 30ہزار جعلی ووٹ نکلے ہیں ،جلد ہی ن لیگ کی چوتھی وکٹ بھی گر جائے گی ۔انہوں نے کہا کہ 2013کے عام انتخاب میں الیکشن کمیشن نے جو قوم کے ساتھ کیا اس کو کبھی نہیں بھولوں گا ،اقتدار میں آکر الیکشن کمیشن کا احتساب کر کے رہوں گا ۔ان کاکہنا تھاکہ حکومت سے چار حلقے مانگے تھے جن میں سے تین وکٹیں گر گئیں جبکہ چوتھی وکٹ گرنا باقی ہے ۔انہوں نے کہا کہ خواجہ آصف سپریم کورٹ کے پیچھے چھپے ہوئے تھے ،ان کے حلقے سے 30ہزار جعلی ووٹ نکلے ہیں ،جلد ہی ن لیگ کی چوتھی وکٹ بھی گر جائے گی ۔

پشاور میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ اب کرپشن بچاﺅ مہم اور کرپشن مٹاﺅ مہم نے قوم کو تقسیم کردیا ہے ،اب میرا اور نواز شریف کا زبر دست ٹی ٹوئنٹی میچ ہو گا جس میں کرپشن بچاو ٹیم کی کپتانی نوازشریف اور کرپشن مٹاﺅ ٹیم کی کپتانی میں کروں گا ،اس بار نواز شریف اپنے ایمپائر بھی کھڑے کرلیں تو انہیں ہرا دوں گا ۔انہوں نے کہا کہ اکرم درانی نے نواز شریف سے کہا کہ جب چاہوں خیبر پختونخواہ کی حکومت گرا دوں ،اکرم درانی رشوت سے تحریک انصاف کے رکن صوبائی اسمبلی خرید کر حکومت گرانے کی بات کر رہے ہیں ۔ان کا کہنا تھا کہ میں بھی چاہتا ہوں اکرم خان درانی لوگوں کو خریدیں ،اس سے تحریک انصاف ایسے لوگوں سے صاف ہو جائے گی جو اپنے ضمیر کا سودا کرتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اب بنوں میں جلسہ کروں گا ،اکرم خان درانی بڑی باتیں کر تے ہیں اب بنوں آرہا ہوں ،اگر وہ کچھ کر سکتے ہیں تو کر کے دکھائیں ۔

عمران خان نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان مجھے یہودی ایجنٹ کہتے ہیں ،مولانا صاحب کے ہوتے ہوئے یہودیوں کو ایجنٹ کی ضرورت کیو ں ہو گی ،جو ظلم مولانا فضل الرحمان کر رہے ہیں ،یہودی بھی اتنی سازشیں نہیں کر سکتے ۔انہوں نے کہا کہ مولانا فض الرحمان نے مشرف ،زرداری اور نواز شریف کے ساتھ حکومت بنائی ،اگر خدانخواستہ اگر پاکستان کا وزیر اعظم یہودی بن جائے تو مولانا فضل الرحمان اس کا بھی وزیر بن جائے گا ۔

انہوں نے کہا کہ جب خیبر پختونخواہ میں حکومت سنبھالی تو ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کے مطابق وہاں سب سے زیادہ کرپشن تھی اور آج فافن کے مطابق خیبر پختونخواہ میں سب سے کم کرپشن ہے اور پنجاب میں سب سے زیادہ کرپشن ہے ۔انہوں نے کہاکہ خیبر پختونخواہ میں بہتر احتساب کے لیے قانون لا یا جا رہا ہے ،اگر نواز شریف بے قصور ہیں تو احتساب کا یہی ہی قانون مرکز میں بھی لائیں ۔عمران خان کا کہنا تھا کہ خیبر پختونخواہ کی پولیس پر فخر ہے جس نے سورن سنگھ کے قاتلوں کو چوبیس گھنٹوں میں پکڑ لیا ۔ان کا کہنا تھا کہ لڑکی کو جلانے کا واقعہ شرمناک ہے لیکن پولیس نے تمام ذمہ دار ان کو گرفتار کر لیا جن کو سخت سزائیں دی جائیں گی ۔

انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخواہ میں پولیس اور سکولوں کو نظام ٹھیک کیا ،کرپشن کو نیچے لے کر آئے اور ہسپتالوں کی صورتحال کو بھی بہتر کیا جا رہا ہے ۔عمران خان نے معذرت کرتے ہوئے کہا کہ بلدیاتی انتخاب میں کچھ مشکلات پیش آئی ہیں اور ابھی صوبے میں یونیورسٹیز ٹھیک نہیں کر سکے جس کو سب کے سامنے مانتا ہوں ۔

مزید : پشاور /اہم خبریں