عوام نے الیکشن میں دوبارہ منتخب کیا تو سندھ کو بھی پنجاب بنا دوں گا : شہباز شریف

عوام نے الیکشن میں دوبارہ منتخب کیا تو سندھ کو بھی پنجاب بنا دوں گا : شہباز ...

مٹیاری(مانیٹرنگ ڈیسک)مسلم لیگ (ن) کے صدر میاں شہباز شریف نے کہا ہے کہ آصف زرداری نے سندھ کی عوام کے ساتھ بہت زیادتی کی جب کہ آج سندھ بے حال ہے اور صرف آصف زرداری خوشحال ہے۔مٹیاری میں مسلم لیگ (ن) کے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے شہباز شریف کا کہنا تھا کہ آصف زرداری نے سندھ کی عوام کو نوکریاں دیں نہ خوشحالی و ترقی کے لیے کوئی کام کیا، پی پی نے یہاں کے لوگوں کے ساتھ بہت زیادتی کی تاہم اب ظلم و ستم کا بدلہ لینے کا وقت آگیا ہے، اگر سندھ ترقی نہیں کرتا تو پاکستان ترقی نہیں کرسکتا جب کہ آپ نے آئندہ انتخابات میں (ن) لیگ کو ووٹ دیا تو سندھ کو پنجاب بنا دوں گا۔وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ سندھ میں غریب و یتیم بچوں کو نہ وظیفے ملتے ہیں اور نہ تعلیم و صحت کی سہولیات میسر ہیں جب کہ ہم نے پنجاب میں غریبوں کے لیے وظیفے دیے، دانش اسکولز بنائے اور بے روزگار افراد کو قرضے دیے، صحت کے شعبے میں پنجاب میں بہترین ہسپتال بنائے جہاں معیاری و جدید طبی سہولیات فراہم کی جارہی ہیں۔شہباز شریف کا کہنا تھا کہ آصف زرداری اور بنی گالا والے اکٹھے ہوگئے ، زرداری کہتے ہیں کہ مرسوں مرسوں سندھ نہ ڈیسوں لیکن میں کہتا ہوں مرسوں مرسوں کم نہ کرسوں، آصف زرداری اربوں روپے لوٹ کر باہر لے گئے اور سبق دیتے ہیں کہ ہم ملک کو کرپشن سے پاک کرکے ترقی یافتہ بنائیں گے۔مسلم لیگ (ن) کے صدر نے کہا کہ جب پی پی کی حکومت ختم ہوئی تو یہاں گھنٹوں لوڈشیڈنگ تھی اور ترقی کا کوئی نام و نشان نہیں تھا، ہماری حکومت نے پاکستان میں لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کیا اور کھربوں روپے کے ترقیاتی کام کیے جب کہ آئندہ عوام نے ووٹ دیے تو سندھ کے گاؤں گاؤں میں لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کردیں گے اور سندھ کو پاکستان کا سب سے ترقی یافتہ صوبہ بنائیں گے۔

شہباز شریف

لاہور(جنرل رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال چکوال میں ایمرجنسی بلاک ، سی ٹی سکین مشین اور پتھالوجی لیب کا افتتاح کیا۔پتھالوجی لیب کا افتتاح کرنے کے بعد وزیراعلیٰ نے مختلف شعبوں کا دورہ کیا اور وہاں پر موجود عملے سے بات چیت کی۔وزیر اعلیٰ نے سی ٹی سکین مشین کے شعبے کا تفصیلی دورہ کیا ۔ وزیراعلیٰ نے ضلعی ہسپتال چکوال کے آپریشن تھیٹر اور او پی ڈی بلاک کا بھی دورہ کیا۔ وزیر اعلیٰ نے مریضوں کی عیادت کی اور احوال دریافت کیا، مریضوں نے وزیراعلیٰ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آپ نے دن رات عوام کی خدمت کرکے دل جیت لئے ہیں اور یہی حقیقی لیڈرشپ کا تقاضا ہے۔وزیراعلیٰ نے پنجاب بھرکے ہسپتالوں کے آؤٹ ڈور میں پتھالوجی لیبز میں ٹیسٹوں کی فیس فی الفور ختم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب بھر میں آؤٹ ڈور پتھالوجی لیبز میں تمام ٹیسٹ مفت ہوں گے اوراس ضمن میں ہر طرح کے وسائل فراہم کیے جائیں گے۔میں پتھالوجی لیب کا شاندار نظام متعارف کرنے پر عوام کو دل کی اتھاہ گہرائیوں سے مبارکباد پیش کرتا ہوں اورپتھالوجی لیب کے سٹاف اورعملے کو سلیوٹ کرتا ہوں جنہوں نے اتنا شاندار نظام متعارف کرایا ہے ۔چکوال میں شاندار پتھالوجی لیب بنائی گئی ہے اورایسی لیب پاکستان میں کم ہی نظر آئیگی اور ان لیبز کی مانیٹرنگ کیلئے تھرڈ پارٹی آڈٹ کا نظام موجود ہے۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ پتھالوجی لیب میں مریضوں کے ٹیسٹ کے اخراجات حکومت پنجاب ادا کریگی۔ پتھالوجی لیب میں آئی ڈی سی کے زیرانتظام 43 اقسام کے مختلف طبی ٹیسٹوں کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ضلعی ہسپتال کی سٹیٹ آف دی آرٹ پتھالوجی لیب میں روزانہ 1200 سے زائد مریضوں کو طبی ٹیسٹ کی سہولت فراہم کرنے کی گنجائش ہے۔آئی ڈی سی کے زیر اہتمام پتھالوجی لیب میں مریضوں کے طبی ٹیسٹ معیاری اور مستند ہوں گے۔چکوال کے ضلعی ہیڈکوارٹر ہسپتال میں 24 گھنٹے سی ٹی سکین ٹیسٹ کی سہولت میسر ہوگی۔ اب چکوال ہسپتال میں سی ٹی سکین مشین خراب نہیں ہوگی اور نہ ہی ڈاکٹر اور عملے کے نہ ہونے کا عذر ہوگا۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر چکوال میں صحت عامہ کے مختلف منصوبوں کے افتتاح کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت نے صحت کے شعبہ میں انقلاب برپا کردیا ہے اورضلعی ہسپتالوں میں اربوں روپے کی سرمایہ کاری سے سی ٹی سکین کا شاندار نظام متعارف کرایا ہے۔مریضوں کو دن ہویا رات ،گرمی ہویا سردی 24گھنٹے سی ٹی سکین کی سہولت مفت حاصل ہوگی۔ کرپشن ،لاپرواہی اوربدیانتی کی وجہ سے مریض دم توڑ جائیں اب ایسا نہیں ہوگایہ کہانی دفن ہوچکی ہے۔انہوں نے کہا کہ ضلعی ہسپتال چکوا ل میں سٹیٹ آف دی آرٹ پتھالوجی لیب بھی بنائی گئی ہے جہاں ہر مہینے ہزاروں ٹیسٹ کیے جارہے ہیں ۔ دوسری طرفشہبازشریف نے ویڈیو کانفرنس کے ذریعے صوبہ بھر میں گندم کی خریداری مہم کا جائزہ لینے کیلئے اجلاس کی صدارت کی۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب میں گندم کے کاشتکاروں کے استحصال کی کسی کو اجازت نہیں دیں گے۔ گندم خریداری میں مڈل مین کے کردار کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ ہر ضلع میں گندم خریداری کی خود مانیٹرنگ کروں گا۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ گندم کے کاشتکاروں کے مفادات کا تحفظ ہر صورت یقینی بنایا جائے اور گندم خریداری میں کاشتکاروں کی سہولت اور آسانی کو ملحوظ خاطر رکھا جائے۔ انہوں نے کہا کہ تمام اضلاع میں مڈل مین کے کردار کو ختم کرنے کیلئے کڑی مانیٹرنگ کی جائے اور کاشتکاروں کا استحصال کرنے والے مڈل مین کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے۔انہوں نے کہا کہ گندم خریداری مہم کے دوران کاشتکاروں کے حقوق کا تحفظ کریں گے اور کسی کو کسانوں کا حق نہیں مارنے دوں گا ۔وزیر اعلی نے کہا کہ باردانہ کی تقسیم میں جہاں کہیں مجھے کوئی شکایت ملی تو انتظامیہ اورمتعلقہ افسران کے خلاف ایکشن لوں گا۔کسان میرے بھائی ہیں، ان کے مفادات کا تحفظ پہلے بھی کیا ،آئندہ بھی کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ وزراء ، مشیران، معاونین خصوصی اور سیکرٹریز گندم خریداری مہم کی نگرانی کریں گے اور میں خود بھی گندم خریداری مہم کا ذاتی طو رپر جائزہ لوں گا۔انہوں نے ہدایت کی کہ ڈپٹی کمشنرز اور ڈی پی اوز روزانہ گندم خریداری مراکز کا دورہ کرکے رپورٹ پیش کریں۔ محکمہ خوراک کے حکام کی جانب سے گندم کی خریداری اور دیگر امور پر بریفنگ دی گئی۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ کاشتکاروں میں باردانہ کی تقسیم کا 37 فیصد کام مکمل ہو چکا ہے۔ سول سیکرٹریٹ سے صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ، دیگر اضلاع سے صوبائی وزراء، سیکرٹریز، کمشنرز اور ڈپٹی کمشنرز او رپولیس حکام نے شرکت کی۔شہبازشریف نے کہا ہے کہ میری زندگی اپنے ملک اور صوبے کے عوام کیلئے وقف ہے اور جب تک جان میں جان ہے، عوام کی خدمت کرتا رہوں گا۔ عوام کے مسائل میرے مسائل ہیں۔ ان خیالات کا اظہار رکن قومی اسمبلی غلام بی بی بھروانہ سے گفتگو کرتے ہوئے کیا جنہوں نے ان سے ملاقات کی۔

وزیراعلیٰ پنجاب

مزید : صفحہ اول