بونیر میں کیمسٹ کی جانب سے جاری ہڑتال دوسرے روز بھی جاری

بونیر میں کیمسٹ کی جانب سے جاری ہڑتال دوسرے روز بھی جاری

بونیر(ڈسٹرکٹ رپورٹر)کیمسٹ اینڈ ڈرگسٹ ایسوسی ایشن کی جانب سے جاری ہڑتال دوسرے روز بھی جاری رہی ۔ہڑتال کے باعث ہیڈکوارٹر ہسپتال ڈگر میں مریضوں اور اسکے لواحقین نے مین شاہراہ سوات تا بونیر ٹریفک کے لئے بند ،احتجاج کرنے والوں کا موقف تھا کہ ڈی ایچ کیو ڈگر میں مریض داخل ہیں ۔مگر سٹور ز بند ہونے کی وجہ سے مریضوں کے جانوں کو شدید خطرات کاسامنا ہیں ۔ضلع ناظم ڈاکٹر عبیداللہ ،نائب ناظم یوسف علی خان ۔ایم پی اے مفتی فضل غفور ،اے ڈی سی ،اے سی ڈگر ڈاکٹر عظمت وزیر اور کیمسٹ اینڈ ڈرگسٹ ایسوسی ایشن کے رہنماؤں شریف الرحمان ۔جنرل سیکرٹری شاکرواللہ خان کے ساتھ کامیاب مذاکرات کئے ۔جسکے نتیجہ میں متفقہ طور پر فیصلہ ہوا کہ ہیڈ کوارٹر ڈگر سمیت پیربابا ۔تور ورسک ۔جوڑ اور دیگر بازاروں میں ایک ایک میڈیکل سٹور ضروری ادویات کے لئے کھلے رہیں گے ۔کیمسٹ اینڈ ڈرگسٹ ایسوسی ایشن کے رہنماؤں نے کہا کہ ہمار ہڑتال ملاکنڈ ڈویژن کی سطح پرہے ۔ہم نے مریضوں کی سہولیات کی خاطر یہ فیصلہ قبول کیاہے ۔البتہ پورے ملاکنڈ ڈویژن کی طرح بونیر میں ہمار شٹر ڈاون ہڑتال رہیگا ۔اے سی ڈگر ڈاکٹر عظمت وزیر نے کہا کہ ہمیں عوام کی مفاد عزیز ہیں ۔کسی کو غیر قانونی سٹور چلانے اور غیر قانونی پریکٹس چلانے کی اجازت نہیں ہو گی ۔ایم پی اے مفتی فضل غفور نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت کیمسٹ اینڈ ڈرگسٹ کے جائیز مطالبات تسلیم کرے ۔صوبائی حکومت عوام کو روزگار دینے کی بجائے انکے منہ سے نوالہ چھین رہی ہیں ۔اسمبلی کے فلور اس اہم مسئلے کو اٹھایا جائے گا ۔مذاکرات کے بعد بھی ہیڈکواٹر ڈگر میں ابھی تک کوئی سٹو ر نہیں کھولا ۔جس کی وجہ سے داخل مریضوں اور انے والے مریضوں کو مشکلات کاسامنا کرنا پڑا ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر