ابو بکر البغدادی کہاں چھپا ہوا ہے ؟ عراقی خفیہ ایجنسی نے صاف بتا دیا ، جانئے 

ابو بکر البغدادی کہاں چھپا ہوا ہے ؟ عراقی خفیہ ایجنسی نے صاف بتا دیا ، جانئے 
ابو بکر البغدادی کہاں چھپا ہوا ہے ؟ عراقی خفیہ ایجنسی نے صاف بتا دیا ، جانئے 

  

بغداد (مانیٹرنگ ڈیسک) شدت پسند تنظیم داعش کا سربراہ ابوبکر البغدادی بھی ایک عجب معمہ بن گیا ہے۔ کبھی خبر آتی ہے کہ اسے ٹھکانے لگا دیا گیا اور کبھی پتا چلتا ہے کہ وہ زخمی ہو گیا۔ کبھی اس کے بچ نکلنے کی خبر سامنے آتی ہے تو کبھی اس کی گرفتاری کا دعوٰی کر دیا جاتا ہے۔ ایک عرصے سے اسے مردہ خیال کیا جا رہا تھا لیکن اب ایک بار پھر یہ دعوٰی سامنے آ گیا ہے کہ وہ زندہ سلامت اور عراق میں ہی روپوش ہے۔

ویب سائٹ العربیہ کے مطابق عراقی خفیہ ایجنسی کے عہدیداران نے اتوار کے روز فوکس نیوز سے بات کرتے ہوئے بتایاکہ القاعدہ کا سربراہ ابوبکر البغدادی تاحال مفرور ہے اور اس کی تلاش کی جارہی ہے۔ آخری معلومات کے مطابق وہ شام کے علاقے الحاجن میں روپوش تھا جو کہ دیر الزور صوبے کی سرحد سے 18 میل کی دوری پر واقع ہے۔ یہ کہنا تھا ابوعلی البصری کا جو کہ عراقی وزارت داخلہ کے انٹیلی جنس اینڈ کاؤنٹر ٹیررازم شعبے کے ڈائریکٹر جنرل ہیں۔ 

ابوعلی البصری نے مزید بتایا کہ البغدادی کے بارے میں یہ معلومات تازہ ترین ہیں جن کی روشنی میں روس، شام اور ایرانی فورسز سے بھی مدد لی جارہی ہے تاکہ ایک مشترکہ آپریشن کرکے اسے گرفتار کیا جاسکے۔ اسی طرح عراقی وزارت دفاع کے ترجمان بریگیڈیئر جنرل یحییٰ رسول نے بھی فوکس نیوز سے بات کرتے ہوئے تصدیق کی کہ البغدادی کے زندہ ہونے کے بارے میں معلومات ملی ہیں جبکہ یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ وہ دریائے فرات کے مشرقی سرحدی علاقے میں روپوش ہے۔ اس بات کا غالب امکان ہے کہ وہ الحساقہ صوبے کے شمال مشرقی علاقے الشدادہ میں روپوش ہے۔ اب کہا جا رہا کہ اسے پکڑنے کے لئے مشترکہ آپریشن ہونے والا ہے، دیکھئے اس کا نتیجہ کیا نکلتا ہے!

مزید : بین الاقوامی