ٹانک میں رمضان المبارک میں گراں فروشوں کی چاندی،قیمتوں کو پر لگ گئے

ٹانک میں رمضان المبارک میں گراں فروشوں کی چاندی،قیمتوں کو پر لگ گئے

ٹانک(نمائندہ خصوصی)محکمہ فوڈ اور تاجر برادری کی ملی بھگت سے ٹانک میں ماہ رمضان سستا بازار میں اشیاء خورد نوش ڈیرہ اسماعیل خان، لکی مروت اور بنوں کی نسبت مہنگے داموں فروخت ہونے لگیں دکاندار ماہ مقدس میں عوام کو ریلیف دینے کے بجائے دونوں ہاتھوں سے لوٹنے میں مصروف تفصیلات کے مطابق ٹانک میں پچھلے کئی سالوں سے ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر کی سیٹ پر براجمان ڈی ایف سی اور ٹریڈ یونین کی ملی بھگت سے ماہ مقدس میں صوبائی حکومت کے رمضان سستا بازار میں اشیا ء خوردونوش کی قیمتوں میں 20سے 30فیصد مہنگے داموں فروخت ہورہی ہیں ٹریڈ یونین سستا رمضان بازار میں اسٹالز لگانے کے بجائے اپنے کاروبار کو تحفظ دے رہے ہیں جبکہ غریب ریڑھی بانوں کو زبردستی بازار سے اٹھاکر رمضان سستا بازار میں دکانیں لگانے پر مجبور کردیاگیا ہے بتاتا جارہاہے کہ ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر نے دکانداروں سے بھتہ لیکر انہیں من مانے نرخ پر اشیاء فروخت کرنے کی کھلم کھلا چھوٹ دے رکھی ہے جو کہ ضلعی انتظامیہ کے لئے درد سر بن چکاہے جس کے باعث دکاندار ماہ مقدس میں غریب شہریوں کو دونوں ہاتھوں سے لوٹ رہے ہیں شہریوں نے صوبائی وزیر خوراک اور سیکریٹری فوڈ سے مطالبہ کیاہے کہ عرصہ دراز سے ٹانک میں تعینات ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر کو ٹانک سے فوری تبدیل کرنے سمیت ماہ مقدس میں اشیا ء خوردونوش کی قیمتوں کو فوری کنٹرول کیاجائے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر /علاقائی