سپریم کورٹ کا سندھ حکومت کوایک ماہ میں سرکلرریلوے اورلوکل ٹرین بحالی کاحکم

سپریم کورٹ کا سندھ حکومت کوایک ماہ میں سرکلرریلوے اورلوکل ٹرین بحالی کاحکم
سپریم کورٹ کا سندھ حکومت کوایک ماہ میں سرکلرریلوے اورلوکل ٹرین بحالی کاحکم

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے سندھ حکومت کو ایک ماہ میں سرکلر ریلوے اورلوکل ٹرین بحالی کا حکم دیدیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں تجاوزات کیس کی سماعت ہوئی،جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں بنچ نے کیس کی سماعت کی،اٹارنی جنرل،سیکرٹری دفاع،میئر کراچی،ایڈووکیٹ جنرل ،ایم ڈی واٹر بورڈ اور کنٹونمنٹ بورڈ کے افسر پیش ہوئے۔ عدالت نے سندھ حکومت کوایک ماہ میں سرکلرریلوے اورلوکل ٹرین بحالی کاحکم دیدیا،عدالت نے کہا کہ ریلوے حکام 15 روزمیں تجاوزات کاخاتمہ کریں،ریلوے حکام 15 روزمیں زمین حکومت سندھ کے حوالے کریں،عدالت نے حکم دیا کہ وزیراعلیٰ،کمشنر، میئر،چیف سیکرٹری سندھ ملکربیٹھیں۔

عدالت نے ریلوے اراضی پربنی سوسائٹیوں کوبھی ختم کرنےکاحکم دیدیا،عدالت نے حکم دیا کہ ریلوے اراضی پرقابض افرادسے معاملات طے کیے جائیں،سیکرٹری نے کہا کہ ریلوے ٹریک پر 25 ہزارکے قریب تجاوزات ہیں،عدالت نے راشدمنہاس روڈپرمتروکہ املاک کی اراضی واگزارکرانےکاحکم دیدیا۔

جسٹس گلزار احمد نے کہا کہ کراچی کودیکھ کہ روناآتاہے کیا بنے گااس کا؟جب لوگوں کی برداشت سے باہرہوگیاتوبڑافسادہوگا،شہرمیں داخل ہوتے ہیں تونظرسرکاری زمین پرقائم فلیٹس پرجاتی ہے،آج ہی پی آئی اے کی زمین سے شادی ہال اوردیگرتجاوزات ختم کریں۔

عدالت نے پی آئی اے پر اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا کہ جہازچل نہیں پاتے اورنکلے ہیں شادی ہال بنانے؟،عدالت نے کہا کہ فوری طور پرغیرقانونی تجاوزات ختم کریں،عدالت نے چیف سیکرٹری کومیئراوردیگرحکام کیساتھ مل کرآپریشن کرنےکاحکم دیدیا۔

مزید : قومی /علاقائی /سندھ /کراچی