پہلے اراکین کا کورونا ٹیسٹ پھر پارلیمانی اجلاس،سلیم مانڈوی والا

    پہلے اراکین کا کورونا ٹیسٹ پھر پارلیمانی اجلاس،سلیم مانڈوی والا

  

اسلام آباد (مایٹرنگ ڈیسک) قومی اسمبلی کے بعد سینیٹ کااجلاس بھی 12 مئی کو طلب کر لیا گیا ہے،تاہم ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا نے مطالبہ کیا ہے کہ اجلاس سے پہلے اراکین اور عملے کا کورونا ٹیسٹ کروایا جائے۔ ٹیسٹ کے بغیر اجلاس میں شرکت کی اجازت دینا تباہ کن ہوگا۔اس معاملے پر مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان اور چیئرمین سینیٹ کی بھی ملاقات ہوئی جس میں سینیٹ سیشن اور تقاریر کا دورانیہ کم رکھنے پر اتفاق کیا گیا۔مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان کے مطابق قومی اسمبلی کی طرح سینیٹ اجلاس کے لئے بھی ایس او پیز پر عملدرآمد کیا جائیگا۔ بامقصد قانون سازی کیلئے پارلیمنٹ کو چلانا بہت ضروری ہے۔ حفاظتی اقدامات کو یقینی بنانے کیلئے متعلقہ اداروں سے رابطے میں ہیں۔دوسری جانب ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا نے سپیکر قومی اسمبلی، چیئرمین سینیٹ اور حکومت کو مشورہ دیا ہے کہ ارکان اور عملے کا کورونا ٹیسٹ کیے بغیر اجلاس نہ بلایا جائے۔انہوں نے کہا کہ سینیٹ کی عمارت میں کوئی وینٹیلیشن نہیں، بغیر کسی ٹیسٹ کے اجلاس میں شرکت کی اجازت دینا ایک تباہی ہوگی۔ امید ہے کہ زیادہ سمجھداری سے کام لیا جائے گا۔

سلیم مانڈوی والا

مزید :

صفحہ اول -