لاک ڈاؤن میں نرمی تاجروں کی بہتری کی نوید ہے،ظاہر شاہ

لاک ڈاؤن میں نرمی تاجروں کی بہتری کی نوید ہے،ظاہر شاہ

  

مردان (بیورورپورٹ) مرکزی تنظیم تاجران کے صوبائی جنرل سیکرٹری ظاہرشاہ نے کہا کہ لاک ڈاؤن میں نرمی کے حکومتی فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہاہے کہ فیصلے سے معاشی بدحالی سے دوچار تاجروں کے چہرے کھل اٹھے ہیں اپنے ایک بیان میں صوبائی جنرل سیکرٹری ظاہر شاہ نے کہاکہ جوں ہی لوکل انتظامیہ کی طرف سے اگر کل نوٹفیکیشن جاری ہوگیا تو ہفتہ کے دن سے نہیں تو پیر کے دن سے ملک بھر کی تمام چھوٹی مارکیٹیں اور دکانیں صبح فجر سے شام 5بجے تک کھولنے کے فیصلہ سے پریشان حال تاجروں اور عام آدمی کی زندگیوں میں آسانیاں پیدا ہو نا شروع ہو نگی۔اسی طرح تعمیراتی شعبے سے وابسطہ پائپ ملز.سرامکس سینٹری ویئر ز پینٹس الیکٹریکل کیبلز سوئچ بورڈز. سٹیل. ایلومینم کی صنعتوں اور دکانوں کو کام کرنے کی اجازت سے لوگوں کو روزگار میسر آئے گا۔انہوں نے کہا اب جبکہ عید الفطر میں چودہ دن باقی ہیں ان دنوں میں چھوٹی مارکیٹیں اورچھوٹی دکانوں کو ہفتے میں 2دن بند رکھنے کے فیصلے پر نظر ثانی کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا وزیراعظم نے کہا کہ لاک ڈاؤن کو مرحلہ وار نرم کرنے کافیصلہ اجتماعی مشاورت سے کیاگیاہے۔ تو اب لاک ڈاؤن میں نرمی کے اس فیصلے پر چاروں صوبوں میں عمل ہو نا چاہیے،جبکہ ایسا محسوس نہیں ہو رہا،اس فیصلے کے حوالے سے بھی محسوس ہو تا ہے کہ پہلے کی طرح صوبوں میں عدم یکسوئی پائی جاتی ہے،انہوں نے مطالبہ کیا کہ اب ہمیں کرونا کے ساتھ معیشت کے پہیے کو چلانا ھو گا،عوام کو کرونا اور بھوک دونوں سے بچانے کیلئے ضروری ھے کہ حکومت بڑے شاپنگ مالز،ریسٹورنٹس،اور دیگر تمام کاروباروں کو بھی جلد از جلد کھولنے کا فیصلہ کرے،انہوں نے کہا وفاقی و صوبائی حکومتوں کو تاجر تنظیمات کے ساتھ بیٹھ کر قابل عمل SOP بنانے کی ضرورت ھے،چونکہ اپنی دکانوں کے اندر تو تاجر حفاظتی اقدامات پر عمل کروا سکتاہے مگر دکان سے باھر مارکیٹوں کے اندر،پارکنگ ایریاز میں اس پر عملدرآمد حکومتی اداروں کی ذمہ داری ہے۔حکومت پریشان حال اور معاشی تنگدستی کا شکار تاجروں کے کندھوں پر مزید بوجھ نہ ڈالے،انہوں نے لاک ڈاؤن میں نرمی کے فیصلے کے تناظر میں شہریو ں کو حکومتی حفاظتی اقدامات و ھدایات کا بھرپور ساتھ دینا ہوگا-انہوں نے تاجروں کو حفاظتی اقدامات یقینی بنانے،دکانوں میں ماسک پہننے،دستانے استعمال کرنے،سماجی فاصلے کو برقرار رکھنے کی اپیل کی اور کہا اب عوام کی بھی ذمہ داری ہے کہ وہ ایس او پیز پر عملدرآمد کریں۔شہری جتنی ذمہ داری کا مظاہرہ کریں گے اتنا ہی کورونا سے محفوظ رہیں گے-بصورت دیگر کرونا وبا پھیلنے سے ایک دفعہ پھر لاک ڈاؤن کی طرف جانا پڑے گا اور ھمارا صحت کا نظام مریضوں کا بوجھ نہیں سہار سکے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -