خیبر پختونخوا میں سب سے کم ٹیسٹنگ اور وائرس سے ہلاکتیں زیادہ کیوں ہیں

  خیبر پختونخوا میں سب سے کم ٹیسٹنگ اور وائرس سے ہلاکتیں زیادہ کیوں ہیں

  

پشاور(سٹی رپورٹر)پاکستان پیپلزپارٹی خیبرپختونخوا کی سیکرٹری اطلاعات سینیٹرروبینہ خالد نے کہاہے کہ خیبرپختونخوا میں سب سے کم ٹیسٹنگ اور وائرس سے سب سے زیادہ ہلاکتیں کیوں ہیں؟امریکا میں اسکائپ سے خیبرپختونخوا کے صحت کا نظام چلانے والے نوشیرواں برکی کب وطن واپس آئیں گے؟عمران خان نے خیبرپختونخوا میں صحت کے نظام کو تباہ کردیا ہے۔اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ خیبرپختونخوا کی حکومت اپنی نااہلی چھپانے کے لیے اب اندازوں اور شرح اموات کے بیسروپا موازنے کا سہارا لے رہی ہے عوام کو گمراہ کرنے کی بجائے حکومت صحت عامہ کی سہولیات کء فراہمی یقینی بنائے وزیرصحت کے بیانات عقل سے عاری ہیں صوبے میں کورونا سے اموات کی شرح دیگر ممالک کے ساتھ موازنہ کرکے کیا ثابت کرنا چاہتے ہیں کیا یہاں اٹلی اور ووہان جیسی صورتحال کا انتظار کر رہے ہیں؟ سینیٹر روبینہ خالدنے مزید کہاکہ حکومت کی اہلیت اور کارکردگی تو صرف ٹی وی اور سوشل میڈیا تک محدود ہے وزیر صحت خود اقرار کر رہے ہیں کہ صوبے میں مریضوں کی تعداد رپورٹ کیے گئے کیسز سے کئی زیادہ ہیں کیونکہ کرونا کے ٹیسٹ کم کیے جارہے ہیں!کیا وزیر موصوف بتانا پسند کریں گے کہ ٹیسٹ کرنا کس کی ذمہ داری ہے۔انہوں نے کہاکہ بلاول بھٹو پاکستان کے وہ واحد لیڈر ہیں جو اس بحران کے وقت ہیلتھ پروفیشنلز کو آن بورڈ لے رہے ہیں ملک بھر کے ڈاکٹرز بلاول بھٹو کے بیانئے کے ساتھ ہیں خیبرپختونخوا کی حکومت وائرس کی وباء کے وقت صوبائی منافرت پھیلانے سے گریز کرے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -