یوم علی ؒ کی مناسبت سے جلوس ومجالس عزاء ایس او پیز کے مطابق نکالے جائینگے

  یوم علی ؒ کی مناسبت سے جلوس ومجالس عزاء ایس او پیز کے مطابق نکالے جائینگے

  

پشاور(سٹی رپورٹر)محرم کمیٹی (زیر نگرانی امامیہ جرگہ خیبر پختونخوا) کے زیر اہتمام یوم علی ؑ کے سلسلے میں دوسرا اہم قومی اجلاس مورخہ 5 مئی 2020کو پشاور کے قدیمی امام بارگاہ آغا سید عالم شاہ جعفری میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں کرونا وائرس کے سبب پیدا ہونے والی غیر معمولی صورتحال میں یوم علی ع۔س کی مناسبت سے ہونے والی مجالس اور جلوس عزاء کی منعقد ہونے سے متعلق تمام معاملات زیر غور آئے۔ اجلاس میں یوم علی ؑ سے متعلق تمام سٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لیا گیا۔ اجلاس میں خطیب امامیہ مسجد کوچہ رسالدار پشاور علامہ ارشاد حسین خلیلی، ذاکر اہلبیت سید ظاہر علی شاہ، ذاکر اہلبیت آخونزادہ مظہر علی ممتاز، متولیان امام بارگاہ سید عالم شاہ جعفری، متولیان امام بارگاہ ٹھیکیدار شیر علی خان سرکی، متولیان امام بارگاہ آخوند آباد، متولیان امام بارگاہ سید جماعت علی شاہ، متولیان امام بارگاہ خیمہ گاہ حسینی، متولیان امام بارگاہ ستگرہ، آراکیین و گدی نشین سخی منور شاہ، متولیان امام بارگاہ فیض پنجتنی، متولیان امام بارگاہ سید چن پیر شاہ کاظمی، متولیان امام بارگاہ مائی پٹھانی /مائی ملنگڑی، متولیان امام بارگاہ پورہ ولی سرکار، متولیان امام بارگاہ سائیں انار،متولیان امام بارگاہ سائیں زرین، متولیان امام بارگاہ سائیں سہراب و دیگر، امام بارگاہ حسینیہ ہال سے انجمن مومنین کے آراکین و عہدے دار، ماتمی سنگتوں و ماتمی دستوں کے سالاران، امامیہ مسجد کمیٹی کوچہ رسالدار پشاور کے ممبران، خدمت گاران امام بارگاہ سید مصطفی شاہ، متولیان امام بارگاہ علمدار کربلاکے ساتھ ساتھ مومنین و زعمائے قوم اور نوجوانوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ شرکاء نے محرم کمیٹی (زیر نگرانی امامیہ جرگہ خیبر پختونخوا) پر مکمل اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے اس بات کا عزم ظاہر کیا کہ ایک ذمہ دار مومن و شہری ہونے کے ناطے ہمیں حکومتی ایس او پیز پر عمل درآمد کو یقینی بنانا چاہیئے۔ اجلاس میں شرکاء نے علمائے کرام، بزرگان قوم اور ذاکرین عظام کی رہنمائی میں اس مشکل صورتحال سے حکمت اور دانائی سے لڑنے کا عزم بھی کیا۔شرکاء اجلاس نے محرم کمیٹی کی بروقت کاوشوں کو اور مختصر وقت میں دو اہم اجلاس بلانے کو لائق تحسین قرار دیا اور کہا کہ ایسی غیر یقینی صورتحال میں تمام سٹیک ہولڈرز کا ایک ساتھ ہونا وقت کی ضرورت تھی جسکو محرم کمیٹی نے کسی کاغذی کاروائی تک محدود نہ رکھا بلکہ اسکو عملی جامہ پہنایا۔ اجلاسوں میں پیش کی گئی تجاویز کی روشنی میں ایک مشترکہ لائحہ عمل سامنے لایا جائے گا۔اجلاس کے اختتام پر علامہ ارشاد حسین خلیلی نے مومنین کے حق میں دعا بھی فرمائی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -