بغیر نمبر پلیٹ کی پولیس موبائل میں سوار پولیس اہلکاروں کی ڈکیتی نما کارروائی

  بغیر نمبر پلیٹ کی پولیس موبائل میں سوار پولیس اہلکاروں کی ڈکیتی نما ...

  

کراچی(کرائم رپورٹر)کراچی سائٹ کے علاقے نیوگلشن لیبر کالونی میں بغیر نمبر پلیٹ کی ایک پولیس موبائل میں سوار پولیس اہلکار ڈکیتی نما کارروائی کرکے لگ بھگ چار لاکھ روپے لوٹ کر فرار ہوگئے، حراست میں لیے گئے دکاندار کو کچھ دیر بعد چھوڑ دیا۔سائٹ بی ایریا تھانے کے ایس ایچ او انسپکٹر زوار حسین کے مطابق یہ پولیس موبائل ان کے علاقے کی نہیں ہے بلکہ نامعلوم نمبر پلیٹ کی یہ گاڑی کسی اور علاقے سے یہاں آئی ہے اور ٹارگٹڈ واردات کی گئی ہے۔ڈکیتی طرز کی کارروائی کی سی سی ٹی وی فوٹیج سامنے آئی ہے، جس میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ایک پولیس موبائل میں سوار اہلکار نیو گلشن لیبر کالونی کی مقامی مارکیٹ میں آئے اور ایک دکان میں گھس گئے۔دکان کے مالک جاوید اختر کے مطابق چہرے چھپائے ہوئے پولیس اہلکاروں نے دکان کی تلاشی لی اور ان کے بھائی نوشاد کو تشدد کا نشانہ بھی بنایا اور دکان سے تین لاکھ روپے لوٹ لیے۔سی سی ٹی وی فوٹیج میں بھی دیکھا جاسکتا ہے کہ پولیس اہلکار تین لاکھ روپے کی گڈیاں اٹھاتے اور اپنے ساتھ لے جاتے نظر آرہے ہیں۔نوشاد کے مطابق پولیس اہلکاروں نے ان کے بھائی کو بھی حراست میں لیا تاہم اسے کچھ دور لے جا کر چھوڑ دیا اور اس کی جیب میں موجود 90 ہزار روپے بھی نکال لیے۔ جاوید نے سائٹ تھانے میں تحریری رپورٹ درج کرادی ہے۔ سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو کے حوالے سے زوار حسین نے بتایاکہ رات کو دو بجے کے قریب نامعلوم پولیس موبائل پر چار نامعلوم پولیس اہلکاروں کی جانب سے نیو گلشن لیبر کالونی میں داؤد کولڈ ڈرنک شاپ میں داخل ہونے اور نوشاد نامی شخص پر تشدد کرنے اور پیسے لینے کے حوالے سے تھانہ سائٹ بی میں ایف آئی آر نمبر 128/2020 زیر دفعہ 392/34 ت پ برخلاف نامعلوم چار پولیس اہلکاروں کیدرج کر کے تفتش کا آغاز کر دیا گیا ہے۔دوسری جانب پولیس کے مطابق سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سے ملزمان کو تلاش کیا جارہا ہے۔ کراچی پولیس میں شامل کالی بھیڑوں کی جانب سے یہ پہلی واردات نہیں ہے بلکہ آئے روز اس طرح کے واقعات رپورٹ ہورہے ہیں۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -