نشتر: کرونا سے ایک اور مریض جاں بحق، شہباز شریف ہسپتال کے ڈاکٹروں میں وائرس کی تصدیق

      نشتر: کرونا سے ایک اور مریض جاں بحق، شہباز شریف ہسپتال کے ڈاکٹروں میں ...

  

ملتان(نمائندہ خصوصی) نشتر ہسپتال ملتان میں زیر علاج کورونا میں مبتلا مزید 1 مریض دم توڑ گیا، ڈسٹرکٹ شہباز شریف ہسپتال کے ایک ڈاکٹر میں بھی کورونا کی تصدیق،(بقیہ نمبر4صفحہ6پر)

گزشتہ 9 روز کے دوران کورونا کے باعث 24 افراد جان کی بازی ہار گئے،نشتر ہسپتال میں کورونا کے باعث مجموعی ہلاکتوں کی تعداد 44ہو گئی،مرض میں مبتلا 43شبہ میں 21 مریض زیر علاج،اب تک 41 مریض صحت یاب اور 24 جنوری سے 8 مئی کے درمیان لائے گئے کورونا کے مشتبہ 720 مریضوں میں سے 166 مریضوں میں کورونا کی تصدیق ہوئی تفصیل کے مطابق نشتر ہسپتال کے آئی سو لیشن وارڈز میں کورونا میں مبتلا زیر علاج ملتان کا رہائشی 80 سالہ علی جمعہ کی صبح دم توڑ گیا اس سے قبل بدھ اور جمعرات کے روز ملتان کے مختلف علاقوں کے رہائشی 71 سالہ شاہدہ, 55 سالہ سیدہ طاہرہ،اور 35 سالہ ابوبکر 70 سالہ فیاض الہی اور 55 سالہ خالدہ نے دم توڑ دیا تھا،یوں یکم اپریل سے 8 مئی کے درمیان نشتر ہسپتال میں کورونا کے باعث دم توڑنے والے افراد کی مجموعی تعداد 44 ہو گئی ہے جبکہ نشتر ہسپتال کے آئی سو لیشن وارڈز میں اس وقت کورونا میں مبتلا 43مریض جبکہ شبہ میں 21 مریض زیر علاج ہیں جن کی رپورٹس کا انتظار ہے جبکہ کورونا کے زیر علاج 02 مریضوں کی حالت تشویشناک بتائی جا رہی جبکہ فوکل پرسن نشتر ہسپتال ڈاکٹر عرفان کے مطابق کورونا سے اب تک 28 ڈاکٹر 06 نرسز اور 06 پیرا میڈیک متاثر ہوئے جن میں سے بیشتر صحت یاب ہو کر گھروں کو روانہ ہو چکے ہیں جبکہ اس وقت 03 نرسز اور ایک لیبارٹری ٹیکنیشن نشتر ہسپتال میں زیر علاج ہیں جبکہ مجموعی طور پر 41 مریض کورونا سے صحت یاب ہو چکے ہیں،ڈاکٹر عرفان ارشد کا کہنا تھا کہ 24 جنوری سے 8 مئی کے درمیان اب تک نشتر ہسپتال میں کورونا کے شبہ میں 720 مریض رپورٹ ہوئے ہیں جن میں سے 166 میں کورونا کی تصدیق ہوئی،دوسری جانب ڈی ایچ کیو شہباز شریف کے میڈیکل آفیسر ڈاکٹر حماد میں گزشتہ روز کورونا کی تصدیق ہوئی ہے،ادھر 28 اپریل سے 8 مئی کے درمیان کورونا کے باعث 24 افراد جاں بحق ہوئے ہیں۔ سیکرٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر پنجاب کیپٹن ریٹائرڈ عثمان کی کاوشوں سے کورونا وائرس سے نمٹنے کے لئے ملکی و غیر ملکی ماہرین پر مشتمل ایک ورکنگ گروپ تشکیل دیا گیا ہے جس میں شامل ماہر وبائیات،ماہر معاشیات،پبلک ہیلتھ سپیشں لسٹ,پبلک پالیسی سپیشلسٹ،اور دیگر ماہرین حکومت کو کورونا سے متعلق سمارٹ سیمپلنگ ماڈل،ٹیسٹنگ اور ڈیٹا کلیکشن،وبا کے پھیلاو اور روک تھام سے لیکر دیگر معاملات پر معاونت اور تجاویز فراہم کریں گے جبکہ یہ ماہرین خیرسگالی اور رفاہی جذبے کے تحت کام کریں گے اور ٹیکنیکل معاونت بھی فراہم کریں گے،اس حوالے سے ینگ ڈاکٹرز ریفارمرز ایسوسی ایشن کے ڈاکٹر میاں عدنان،ڈاکٹر زبیر رفیقی،اور ڈاکٹر سعید چودھری نے سیکرٹری ہیلتھ کیپٹن ریٹائرڈ عثمان کی اس کاوش کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ یقیناً اس ورکنگ گروپ کی تشکیل سے کورونا کو سمجھنے اور اسکے پھیلاو کو روکنے میں مدد ملے گی جو کہ نہایت لائق تحسین قدم ہے۔ ادھر چلڈرن ہسپتال کے ڈاکٹر شہزاد مقصود میں کرونا پازیٹیو آنے پر رابطے میں رہنے والے 4 ڈاکٹرز سمیت عملہ کے دیگر 18 افراد کو آئسولیٹ کر دیا گیا ہے۔ چلڈرن ہسپتال ملتان کے ڈاکٹر شہزاد مقصود میں 5 مء کو کرونا پازیٹیو آنے پراس کے ساتھ رابطے میں رہنے والے ڈاکٹرز ودیگر عملہ جن میں اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر سجاد حسین۔ڈاکٹر صفدر۔ڈاکٹر ملی۔ڈاکٹر کاشف۔ڈکٹرخرم شہزاد۔ڈاکٹر خالد اور 6 نرسز میں صادیہ۔خدیجہ طاہرہ۔نجمہ خالد۔شمشاد جویریہ ان کے علاوہ وارڈ آیا میں ایسٹر مسیح۔سمیرا۔اقبال بی بی جبکہ جینٹوریل میں ابراہیم۔حفیظ اور عامر شامل ہیں۔ان کو آئسولیٹ کرکے سیمپل کرونا ٹیسٹنگ کے لیے نشتر لیبارٹری بھجوا دئے گئے ہیں اس کے علاوہ محکمہ صحت نے کورونا کے مثبت کیسز سامنے آنے کے بعد مزید 4 علاقوں رشید آباد، جھوک وینس،محمود آباد اور احمد آباد کے علاقوں کو سیل کرنے کی درخواست کر دی ہے۔

کرونا ٹیسٹ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -